درجہ حرارت میں کمی ، سموگ کا خطرہ بڑھ گیا ، شہریوں کیلئے اشحتیا طی تدابیر جاری

درجہ حرارت میں کمی ، سموگ کا خطرہ بڑھ گیا ، شہریوں کیلئے اشحتیا طی تدابیر ...

لاہور(اسد اقبال)درجہ حرارت میں کمی کے پیش نظر سموگ کے خطرات لاحق ہونا شروع ہو گئے ہیں رات کے اوقات میں میدانی علاقوں ،جی ٹی روڈ اور موٹروے پر ہلکی سموگ چھانے لگی ہے۔محکمہ مو سمیات کا کہنا ہے کہ سموگ ایک خطرناک جراثیم ہے جس سے بچنے کے لیے اقدامات نہایت ضروری ہیں ۔تفصیلات کے مطابق صوبائی دارلحکومت میں سموگ کا اثر ظاہر ہونا شروع ہوگیا بالخصوص صبح اور شام کے اوقات میں شہریوں کو آنکھوں میں چھبن جبکہ سانس کے دشواری کی شکایات بھی سامنے آنے لگی ہیں ۔موٹر سائیکل سوار افراد اس سے زیادہ متاثر ہونے لگے ہیں ۔واضح رہے کہ محکمہ موسمیات اس حوالے سے پہلے ہی خطرہ کا اشارہ دے چکا ہے کہ اگر نومبر کے مہینے میں بارشیں نہ ہوئیں توکسی بھی وقت سموگ کے خطرے کا سامنا کر نا پڑ سکتا ہے ۔ماہرین کے مطابق اگر ایک دفعہ سموگ آجائے تو اس کے بادل کئی دن تک شہر کی فضاؤں میں ڈیرے ڈالے رکھ سکتے ہیں اور اس میں شہریوں کو آنکھوں،سانس اور پھیپھڑوں کی بیماریوں کا بھی سامنا کرنا پڑسکتا ہے جبکہ یہ عفریت سانس کے مریضوں کیلئے جان لیوا بھی ثابت ہوسکتی ہے ۔دوسری جانب حکومت پنجاب کی ہدایت محکمہ ماحولیات بھی سموگ سے نمٹنے کے لیے تمام اقدامات کو بروئے کار لا رہی ہے اور کھیتوں میں فصلوں کی بقایا جات کو جلانے والوں کے خلاف ایکشن لیا جارہا ہے اور بھٹہ خشتوں کو بھی بند کر نے پر غور کیا جا رہا ہے ۔ چیف میٹرولو جسٹ ریاض نے پاکستان سے گفتگو کر تے ہوئے کہا کہ سموگ ایک خطرنا ک جراثیم کی حیثیت رکھتا ہے جس سے شہریوں کو محفوظ رہنا کے لیے احتیاطی تدابیر پر عمل کر نا چائیے خاص طورپر آنکھوں کو سمو گ سے محفوظ رکھنے کے لیے ڈاکٹر سے رجوع کرنا چائیے ۔

مزید : کراچی صفحہ اول