لیاری گینگ وار کے سرغنہ عذیر بلوچ کی پیشی معمہ بن گئی

لیاری گینگ وار کے سرغنہ عذیر بلوچ کی پیشی معمہ بن گئی

کراچی (اسٹاف رپورٹر)ڈیڑھ برس گزرنے کے بعد بھی لیاری گینگ وار کے سرغنہ عذیر بلوچ کی پیشی کی معمہ بن گئی۔ انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت نے لیاری آپریشن میں پولیس اور شہریوں کے قتل سے متعلق گینگ وار کے سرغنہ عذیر بلوچ کی کسٹڈی سے متعلق تفصیلی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیدیا۔ کراچی سینٹرل جیل میں انسداد دہشتگردی کمپلیکس میں خصوصی عدالت کے روبرو لیاری آپریشن میں پولیس اور شہریوں کے قتل سے متعلق سماعت ہوئی۔ پولیس افسران و اہلکاروں کے اہلخانہ اور لیاری کے عوام عدالتوں میں چکر لگانے پر مجبور ہوگئے۔ ڈیڑھ برس گزرنے کے بعد بھی لیاری گینگ وار کے سرغنہ عذیر بلوچ کی پیشی کی معمہ بن گئی۔ عدالت نے ایک بار پھر جیل سپریٹنڈنٹ کو عزیر بلوچ سے متعلق تفصیلات پیش کرنے کا حکم دے دیا۔ عدالت میں قتل، اقدام قتل سمیت 14 مقدمات کی سماعت کی گئی۔ عدالت نے ریماکس دیئے عذیر بلوچ کی عدم پیشی کی وجہ سے مقدمات زیر التوا ہیں۔ جیل حکام نے بتایا 11 اپریل 2017 کو عذیر بلوچ کو فوج کے حوالے کیا گیا۔ عدالت نے ریماکس دیئے 2012 کا مقدمہ عزیر بلوچ کی عدم پیشی کے باعث التوا کا شکار ہے۔ جیل حکام نے بتایا ملزم کو تاحال جیل کے حوالے نہیں کیا گیا۔ عدالت نے جیل حکام کو آئندہ سماعت پر عذیر بلوک کی کسٹڈی کے حوالے تفصیلی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیتے ہوئے سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کردی۔ گینگ وار کے سرغنہ عذیر بلوچ و دیگر کے خلاف تھانہ کھارادر، چاکیواڑہ، لیاری ودیگر میں مقدمات درج ہیں۔

مزید : کراچی صفحہ اول