’آئی جی اسلام آباد کو دراصل اس لیے تبدیل کیا گیا کیونکہ ۔ ۔ ۔‘‘ وفاقی وزیرعلی زیدی بھی میدان میں آگئے، اعظم سواتی کے اعتراف کے باوجود حیران کن بیان داغ دیا

’آئی جی اسلام آباد کو دراصل اس لیے تبدیل کیا گیا کیونکہ ۔ ۔ ۔‘‘ وفاقی ...
’آئی جی اسلام آباد کو دراصل اس لیے تبدیل کیا گیا کیونکہ ۔ ۔ ۔‘‘ وفاقی وزیرعلی زیدی بھی میدان میں آگئے، اعظم سواتی کے اعتراف کے باوجود حیران کن بیان داغ دیا

  

کراچی (ٹی وی رپورٹ) وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی نے کہا ہے کہ آئی جی اسلام آباد کو تبدیل کرنے کی بات کئی دنوں سے چل رہی تھی، جرائم کم نہ ہونے پر وزیراعظم نے آئی جی کو تبدیل کرنے کا فیصلہ کیا، آل پارٹیز کانفرنس کرنا اپوزیشن کا حق ہے ، مولانا فضل الرحمٰن کو ایم این اے بنادیں اے پی سی ختم ہوجائے گی، اٹھارہویں ترمیم میں ترامیم لانے کا کوئی ارادہ نہیں ہے، وزیراعظم کے دورئہ چین میں قوم کو انشاء اللہ بڑا سرپرائز ملے گا، بطور وفاقی وزیر بحری امور چین سرمایہ کاری لینے کیلئے جارہا ہوں۔

 جیو  نیوز کے پروگرام ”کیپٹل ٹاک“ میں میزبان حامد میر سے گفتگو کررہے تھے۔ پروگرام میں ن لیگ کے رہنما میاں جاوید لطیف اور پیپلز پارٹی کی رہنما ڈاکٹر نفیسہ شاہ بھی شریک تھیں۔میاں جاوید لطیف نے کہا کہ اپوزیشن کی رائے کو اہمیت نہ دی جائے تو لاوا پھٹتا ہے، ہمارا مقصد پی ٹی آئی حکومت گرانا نہیں عوامی مسائل ہیں ،این آر او ہمیشہ کچھ طاقتور لوگوں سے ہوتا ہے، پی ٹی آئی کو خوف ہے کہ کہیں انہیں بتائےبغیر کوئی این آر او تو نہیں کررہا ۔ڈاکٹرنفیسہ شاہ نے کہا کہ ن لیگ پٹواریوں کی تو پی ٹی آئی حوالداروں کی سیاست کررہی ہے، حکومت استبدادیت کی طرف جارہی ہے، میڈیا میں مشرف دور میں اتنی مایوسی نظر نہیں آئی جتنی اس وقت نظر آرہی ہے، پٹواری کی طرح حوالدار بھی کشکول لے کر سعودی عرب پہنچ گئے۔

ان کا  کہنا تھا  کہ نواز شریف نے آل پارٹیز کانفرنس میں شرکت سے انکار نہیں کیا ہے، مولانا فضل الرحمٰن نے اے پی سی کیلئے 31اکتوبر کی کوئی تاریخ نہیں دی تھی، یہ معاملات منگل تک واضح ہوجائیں گے۔علی زیدی نے کہا کہ آئی جی اسلام آباد کو تبدیل کرنے کی بات کئی دنوں سے چل رہی تھی، سابق آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ کے معاملہ کو اس سے ملایا نہیں جاسکتا ،اے ڈی خواجہ کے کاموں سے صوبائی حکومت متاثر ہورہی تھی جبکہ ہم کسی کو کام کرنے سے نہیں روک رہے،چیف جسٹس آف پاکستان فیصلے کی وجوہات پوچھنے کے بعد کوئی فیصلہ کرتے تو اچھا ہوتا، ہم نے اے ڈی خواجہ کہ نیشنل ہائی وے کا آئی جی لگایا ہے۔

علی زیدی کامزید  کہنا تھا کہ خیبرپختونخوا پولیس کی تعریف سب ہی کرتے ہیں، ہم دورِاقتدار میں غلطیاں کریں گے تو ہم بھی بھگتیں گے، ن لیگ اور پیپلزپارٹی ایک دوسرے پر بنائے گئے کیسز بھگت رہی ہیں،وزیراعظم نے ڈاکوؤں اور چوروں کیخلاف بات کی ن لیگ اور پیپلز پارٹی کیوں گھبرارہی ہے، وزیراعظم کی بہن خود کو صحیح ثابت نہیں کرسکیں تو وہ بھی جیل میں جائیں گی، نواز شریف احتساب عدالت کے باہر بھی اسی طرح پرچی لیے کھڑے تھے جیسے اوباما کے ساتھ کھڑے تھے۔ علی زیدی نے کہا کہ اسحاق ڈار کی جائیدادوں کی تمام تفصیلات بتائیں میں جھوٹ بول رہا ہوں تو مجھ پر کیس کریں، اسحاق ڈار لندن میں بھاگتے نظرآتے ہیں پاکستان آنے کیلئے بیمار ہیں، اپنی وزارت سے متعلق ڈیٹا اکٹھا کررہا ہوں،زہرہ شاہد کو کے پی ٹی کے ملازم نے مارا جسے بابر غوری نے ہائر کیا تھا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد /سندھ /کراچی