دھواں چھوڑنے والی گاڑیاں بند کرنے کیلئے حکمت عملی تیارکرنے کاحکم 

  دھواں چھوڑنے والی گاڑیاں بند کرنے کیلئے حکمت عملی تیارکرنے کاحکم 

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہورہائی کورٹ نے سموگ اور ماحولیاتی آلودگی کے تدارک کے لئے دھواں چھوڑنے والی گاڑیاں بند کرنے کے لئے حکمت عملی تیارکرنے کاحکم دے دیا مسٹر جسٹس شاہد کریم نے یہ حکم شیراز ذکاء ایڈووکیٹ کی درخواست پر جاری کیا، جس میں سموگ کے خاتمہ کے لئے مناسب اقدامات نہ کرنے کانکتہ اٹھایا گیاہے،حکومت کی طرف سے عدالت کو بتایا گیا کہ سموگ کو قدرتی آفت قراردے دیاگیاہے جس پر فاضل جج نے ریمارکس دیئے کہ سموگ کو قدرتی آفت قرار دینے کے نوٹیفکیشن سے مسئلہ حل نہیں ہوگا، سموگ کے تدراک کے لئے ٹھوس اقدامات کی ضرورت ہے، فاضل جج نے سموگ کے تدارک کے لئے ٹھوس اقدامات نہ کرنے پر افسوس کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ لگتاہے چیف سیکرٹری پنجاب سموگ کے تدارک کے بارے میں سنجیدہ نہیں،بدقسمتی سے متعلقہ ڈپٹی کمشنر اپنے علاقوں میں سموگ کے تدراک کیلئے کردار ادا نہیں کر رہے،ایک وقت تھا ڈپٹی کمشنر ذمہ داری سے اپنے فرائض ادا کرتے تھے، عدالت نے حکم دیا چیف سیکرٹری پنجاب، ٹریفک پولیس اور محکمہ ماحولیات کے حکام اجلاس کریں، جس میں دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کو بند کرنے کی حکمت عملی بنائی جائے، عدالت نے سموگ اور ماحولیاتی آلودگی کے خاتمہ کے لئے بنائی گئی پالیسی اور حکومت کی طرف سے اٹھائے گئے اقدامات کی بابت آئندہ تاریخ سماعت پر پیش رفت رپورٹ طلب کرلی۔

ماحولیاتی آلودگی

مزید :

صفحہ آخر -