بچی اغواء، والد کو تھانے میں گالیاں، پولیس رویہ سے دلبرداشتہ شہری نے موت گلے لگا لی 

  بچی اغواء، والد کو تھانے میں گالیاں، پولیس رویہ سے دلبرداشتہ شہری نے موت ...

  

 مظفرگڑھ(نامہ نگار) خان گڑھ پولیس کے ناروا سلوک سے تنگ آ کر جاوید نامی شہری نے زہریلی گولیاں کھا کر اپنی(بقیہ نمبر35صفحہ7پر)

 زندگی کا خاتمہ کر لیا۔ متوفی کے لواحقین کے مطابق چند روز قبل خان گڑھ میں پرانا سینما کے عقب میں رہائش پذیرجاوید کھلنگ نامی شخص کی 13 سالہ بیٹی نگینہ کو بھت والہ کے رہائشی صابر ولد بشیر وغیرہ نے گھر میں اکیلی ہونے پر اغوا کر لیا تھا، جس کی ایف آئی پولیس تھانہ خان گڑھ نے معاویہ بچی کے دادا کی مدعیت میں درج کر لی لیکن کارروائی آگے نہ چل سکی اور بچی برآمد نہ کی جا سکی، لوا حقین نے بتایا کہ جاوید نے متعدد بار تھانے کے چکر لگائے لیکن شنوائی نہ ھوئی،بلکہ تفتیشی مقدمہ جو کہ کسی ریٹائرڈ ڈی ایس پی کا عزیز بتایا جاتا ہے نے اس سے الٹا مبینہ گالم گلوچ اور ناروا سلوک کیا۔ بھائی عبدالرشید کے مطابق خان گڑھ پولیس کے ناروا سلوک اور نازیبا الفاظ سے دلبرداشتہ ھو کر جاوید نے اپنی زندگی کا خاتمہ کیا۔ لواحقین نے وزیر اعلی پنجاب، آئی جی پنجاب، ایڈیشنل آئی جی پولیس جنوبی پنجاب اور ڈی پی او مظفرگڑھ سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

بیٹی اغواء

مزید :

ملتان صفحہ آخر -