موٹروے بداخلاقی کیس، ملزموں کی تصاویر‘ویڈیو چلانے پر پابندی عائد

موٹروے بداخلاقی کیس، ملزموں کی تصاویر‘ویڈیو چلانے پر پابندی عائد

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے موٹروے بداخلاقی کیس کے ملزموں کی تصاویراور ویڈیو چلانے پر پابندی عائد کر دی،چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹر جسٹس محمد قاسم خان نے3 صفحات پرمشتمل تحریری حکم جاری کیاہے جس میں عدالت نے ملزم عابدملہی،شریک ملزم اورمدعی کی تصاویراورویڈیومیڈیاپرچلانے سے روک دیاہے،عدالت نے موٹروے بداخلاقی کیس کی رپورٹنگ پرپابندی سے متعلق انسداد دہشت گردی کی عدالت کافیصلہ معطل کرتے ہوئے پیمرا کوحکم دیا کہ عدالتی حکم پرمن وعن عمل درآمد کروایاجائے،عدالت نے قراردیا کہ اس کیس کی خبروں پرکوئی پابندی نہیں تاہم ملزموں اورمدعی مقدمہ کی تصاویر اور ویڈیوچلانے پرپابندی ہوگی،رپورٹنگ پر فاضل جج نے اس کیس کے

 ملزموں کی گرفتاری سے متعلق وزرااورمشیروں کی پریس کانفرنس کاریکارڈ بھی طلب کیاہے،انسداددہشت گردی کی عدالت نے موٹروے بداخلاقی کیس کی رپورٹنگ اورخبروں پر پابندی عائد کررکھی تھی جس کے خلاف ابوذرسلمان خان نیازی ایڈووکیٹ کی وساطت سے درخواست دائر کی گئی،عدالت عالیہ نے مذکورہ حکم کے ساتھ درخواست پر کارروائی ایک ہفتے کے لئے ملتوی کردی۔

پابندی عائد 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -