’میں اورٹرمپ ایک جیسے ہیں‘وزیراعظم عمران خان نے اعتراف کر لیا

’میں اورٹرمپ ایک جیسے ہیں‘وزیراعظم عمران خان نے اعتراف کر لیا
’میں اورٹرمپ ایک جیسے ہیں‘وزیراعظم عمران خان نے اعتراف کر لیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ میں اور ٹرمپ غیر روایتی سیاستدان ہیں۔ جوبائیڈن رائے عامہ میں مقبول نظر آرہے ہیں لیکن ٹرمپ روایتی سیاستدان نہیں وہ کچھ بھی کر سکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ بھارت نازی نظریئے پر چلنے والی فاشسٹ ریاست ہے۔ بھارت اپنے ہمسائے ممالک کے لیے خطرہ ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے جرمن جریدےدیرسپیگل کو انٹرویودیتے ہوئے کہا ہے کہ پہلا لیڈرہوں جس نے سوشل میڈیا پر نوجوانوں کو متحرک کیا ہے، میں نے 22سال جدوجہد کی اور اپنی پارٹی بنائی، مختلف سوچ اپنا کر نوجوانوں کو اپنی جانب راغب کیا۔ ا ن سے سوال کیاگیا کہ امریکا کا اگلا صدرکون ہوگا؟جوبائیڈن یا ٹرمپ؟ تو وزیراعظم نے جواب دیا کہ جوبائیڈن رائے عامہ میں مقبول نظرآرہے ہیں لیکن ڈونلڈ ٹرمپ میری طرح روایتی سیاستدان نہیں، وہ کچھ بھی کر سکتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ نیاامریکی صدرجوبھی ہوپاکستان اوربھارت سے یکساں رویہ رکھناچاہیے۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ بھارت نازی نظریئے پر چلنے والی فاشسٹ ریاست ہے، بھارت سے پاکستان،چین، بنگلادیش اور سری لنکا کو خطرہ ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ خطے میں کشیدگی ہے جو کسی وقت بھی بھڑ ک سکتی ہے۔ امریکا چین کی وجہ سے بھارت کو ترجیح دیتاہے۔امریکا سے بھارت کے تناظرمیں مساوی رویہ دیکھناچاہتے ہیں،کشمیرپرامریکاسے پاک بھارت کے ساتھ یکساں پالیسی کی توقع ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے کورونا کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے سمارٹ لاک ڈاﺅن کیاجوکامیاب رہا،سمارٹ لاک ڈاؤن پالیسی سے بڑے نقصان سے بچے،ہم نے زرعی شعبے کوبندنہیں کیااورتعمیراتی شعبہ بھی جلدکھولا۔انہوں نے کہا کہ بھارت نے سمارٹ لاک ڈاﺅن کے بجائے پوراملک بند کردیا،ہم ہفتہ وارایک لاکھ80ہزارسے2لاکھ ٹیسٹ کررہے ہیں، پاکستان کوروناوائرس کامکمل ادراک رکھتاہے۔ 

مزید :

اہم خبریں -قومی -