تمام ادارے ڈرگ مافیا کیخلاف ایک صف میں کھڑے ہیں: خلیق الرحمان 

تمام ادارے ڈرگ مافیا کیخلاف ایک صف میں کھڑے ہیں: خلیق الرحمان 

  

                پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے مشیر برائے محکمہ ایکسائز،ٹیکسیشن و نارکوٹکس کنٹرول خلیق الرحمن نے کہا ہے کہ صوبے محکمہ ایکسائز،ٹیکسیشن و نارکوٹکس کنٹرول محکمہ اطلاعات کے تعاون سے منشیات کے خلاف مہم کو بھرپور طریقے سے چلائی جا رہی ہے۔محکمہ ایکسائز نے صوبے میں ڈرگ مافیا کے خلاف آپریشن تیز کردیا ہے۔ تمام ادارے ڈرگ مافیا کے خلاف ایک صف میں کھڑے ہیں۔ عوام میں شعور اور آگاہی پیدا کرنے کے لئے سیمینار اور ورکشاپ کا سلسلہ تمام اضلاع میں شروع کیا جارہا ہے۔ والدین اپنے بچوں کے معمولات اور ارد گرد کے ماحول پر کڑی نظر رکھیں۔ عوام انسداد منشیات کے حوالے سے حکومتی اقدامات کی بھرپور پیروی کریں۔ نشہ ایک خطر ناک ناسور ہے جو ہمارے معاشرے کو کھوکھلا کر رہی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز انسداد منشیات کے حوالے سے شروع کی جانے والی مہم کے حوالے سے بریفنگ کے موقع پر اجلاس سے خطاب کے دوران کیا۔ اجلاس میں سیکریٹری ایکسائز سید حیدر اقبال، ڈی جی ایکسائز ثاقب رضا اسلم اور محکمہ ایکسائز،ٹیکسیشن و نارکوٹکس کنٹرول کے افسران نے شرکت کی۔ اس موقع پر ایکسائز و ٹیکسیشن آفیسر زاہد اقبال نے اجلاس کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ صوبے کے تمام اضلاع میں انسداد منشیات مہم ریڈ ربن کے نام سے شروع کی گئی ہے۔ تمام اضلاع کے ایکسائز دفاتر کے زیر اہتمام محکمہ اطلاعات کے تعاون سے مختلف سرگرمیاں شروع کر دی گئی ہے۔ جس میں عوام کو انسداد منشیات مہم کے حوالے سے تفصیلات فراہم کی جارہی ہیں۔ سکولوں، کالجز اور یونیورسٹیوں میں اس سلسلے میں ورکشاپ اور سیمینار منعقد کئے جارہے ہیں۔ جس میں نوجوان نسل کو مختلف سمعی و بصری آلات کے ذریعے منشیات کے نقصانات کے حوالے سے ڈاکومنٹریز اور خصوصی پروگرام پیش کئے جائیں گے۔ ڈائریکٹر جنرل ایکسائز و ٹیکسیشن و نارکوٹکس کنٹرول خیبر پختونخوا ثاقب رضا اسلم نے صوبہ بھر میں ڈرگ مافیا کے خلاف شروع کئے گئے آپریشن کی تفصیلات پیش کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ ڈرگ مافیا کے خلاف آپریشن تیز کردیا گیا ہے صوبے میں چھ مذید چیک پوائنٹس قائم کئے جا رہے ہیں۔ صوبے کے تمام داخلی اور خارجی راستوں کی کڑی نگرانی کی جارہی ہیں۔ جس کے دور رس نتائج مرتب ہوں گے۔ اس موقع پر مشیر ایکسائز وٹیکسیشن خلیق الرحمن نے محکمہ ایکسائز کو ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ قوم کے مستقبل کے معماروں کو تباہ کرنے والوں کے خلاف بلا امتیاز کاروائی کی جائے اور ڈرگ مافیا کے عناصر کو نشان عبرت بنایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ عوام نشہ آور اشیاء اپنے بچوں کی سرگرمیوں اور ارد گرد کے ماحول پر کڑی نظر رکھیں اور اپنا اور اپنے بچوں کے مستقبل کو تباہی سے بچائے۔ انہوں نے کہا کہ نشہ کی انتہا صرف اور صرف موت اور خاندان کی تباہی ہے۔ سکول، کالج اور یونیورسٹیوں میں نشہ آور اشیاء کی بڑھتی ہوئی مقدار ہمارے لئے ایک خطرے کی گھنٹی ہے۔ ہمارے نسل کو تباہ کرنے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -