حالات قابو میں آنے سے متعلق ڈیڈ لائن نہیں دی جا سکتی: ترجمان پنجاب حکومت 

حالات قابو میں آنے سے متعلق ڈیڈ لائن نہیں دی جا سکتی: ترجمان پنجاب حکومت 

  

     لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)ترجمان پنجاب حکومت حسان خاور نے کہا ہے کہ حالات قابو میں آنے کے بارے میں کوئی ڈیڈ لائن نہیں دی جا سکتی۔ کالعدم تنظیم کے رہنما کی رہائی انتظامی مسئلہ نہیں، قانونی معاملہ ہے۔ترجمان پنجاب حکومت حسان خاور کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ وفاق اور حکومت پنجاب دونوں اس معاملے پر مشترکہ کام کر رہی ہیں۔ ناموس رسالتؐ کا تحفظ ہم سب کے ایمان کا جزو ہے۔ ناموسِ رسالتؐ پر کسی ایک گروہ یا جماعت کی اجارہ داری ہرگز قبول نہیں۔ راستوں کی بندش اور موبائل سروس معطل ہونے سے شہریوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔ حکومت حالات کو نارمل کرنے کیلئے ہرممکن کوشش کر رہی ہے، ہماری مثبت پیش رفت کے جواب میں ضد اور ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کیا گیا۔ شہریوں کے جان و مال کا تحفظ اور امن و امان قائم کرنا ریاست کی ذمہ داری ہے جس پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جا سکتا۔حسان خاور نے کہا کہ ناموس رسالت کے ذریعے قومی وحدت کو کمزور کرنے کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔ حکومت کی صلح کی پالیسی کو کمزوری سمجھنا غلط ہے، عوام کے تحفظ کے لئے کوئی کسر اٹھا نہیں رکھی جائے گی۔ ایسے معاملات میں کچھ لو اور کچھ دو کی بنیاد پر مسائل حل کیے جاتے ہیں۔ حکومت نے ہر ممکن کوشش کی ہے کہ اس مسئلہ کو باہمی افہام و تفہیم سے حل کیا جائے۔ وزیر اعلیٰ پنجاب ذاتی طور پر حکومت کی حکمت عملی پر عملدرآمد کی مانیٹرنگ کر رہے ہیں۔ حکومت کا موقف واضح اور دو ٹوک ہے جس میں کوئی کنفیوژن نہیں۔ 

ترجمان پنجاب حکومت

مزید :

صفحہ اول -