لودھراں،اوباشوں کا گھر گھس  کر لڑکی پر حملہ،مزاحمت پر تشدد 

  لودھراں،اوباشوں کا گھر گھس  کر لڑکی پر حملہ،مزاحمت پر تشدد 

  

 لودھراں (نمائندہ پاکستان  )اوباشوں کی گھر میں گھس کر لڑکی سے بداخلاقی کی کوشش، بچانے کیلئے مزاحمت (بقیہ نمبر40صفحہ6پر)

کرنے پر آٹھ ماہ کی حاملہ خاتون پر تشدد کی انتہا کردی خاتون ہسپتال داخل، ورثا نے پولیس کے خلاف مظاہرہ کیا ہے۔نواحی علاقے کلو والہ کی رہائشی درجنوں خواتین، بچوں اور بزرگوں نے پولیس تھانہ سٹی لودھراں کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ کہ دو روز قبل علاقے پانچ اوباش نواجوانوں نے گھر میں گھس کر لڑکی کی عزت پر حملہ کیا۔گھر میں موجود لڑکی کی بڑی بہن آٹھ ماہ کی حاملہ جندن مائی نے مزاحمت کی تو اس پر ڈنڈوں سے اتنا تشدد کیا کہ حالت غیر ہو گئی۔خاتون کو ہسپتال منتقل کرکے تھانہ سٹی کو مطلع کیا لیکن پولیس ٹس سے مس نہ ہوء الٹا انہی کے تین رشتہ دار نقص امن کا مقدمہ درج کرکے حوالات میں بند کردیے۔ضلعی ہسپتال میں زیر علاج خاتون جندن ماء کا کہنا ہے کہ حملہ آوروں کی یہ تیسری واردات ہے پہلے معاف کیا لیکن اب اس کی کوکھ اجاڑ دی گء ہے۔جندن مائی اور اس کے لواحقین نے ڈی پی او سے انصاف کی اپیل کی ہے۔

جندن مائی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -