وفاقی ملازمین کو 20فیصد الاﺅنس دینے کا نوٹیفکیشن جاری نہ کرنے پر سیکریٹری خزانہ کو توہین عدالت کا نوٹس جاری

وفاقی ملازمین کو 20فیصد الاﺅنس دینے کا نوٹیفکیشن جاری نہ کرنے پر سیکریٹری ...
وفاقی ملازمین کو 20فیصد الاﺅنس دینے کا نوٹیفکیشن جاری نہ کرنے پر سیکریٹری خزانہ کو توہین عدالت کا نوٹس جاری

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) اسلام آباد ہائی کورٹ نے وفاقی ملازمین کو تنخواہوں میں 20 فیصد الاو¿نس دینے کا نوٹی فکیشن جاری نہ کرنے پر سیکریٹری خزانہ کوتوہین عدالت کاشوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے 9 اکتوبر کو طلب کرلیا۔الاو¿نس سے محروم وفاقی ملازمین کی جانب سے دائر درخواست کی سماعت جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے کی۔ دوران سماعت جسٹس شوکت عزیز نے وزارت خزانہ کے نمائندے سے اب تک نوٹی فکیشن جاری نہ کئے جانے سے متعلق استفسار کیا تو وفاقی خزانہ کے نمائندے نے مو¿قف اختیار کیا کہ تمام ملازمین کو الاو¿نس دینے سے قومی خزانے پر سالانہ اربوں روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا جس پر جسٹس شوکت نے کہا کہ یہ کیسے ممکن ہے کہ الاو¿نس میں اضافے کے اعلان سے کچھ وفاقی ملازمین مستفید ہوں اور باقی کو محروم رکھا جائے۔فاضل عدالت نے سیکریٹری خزانہ کو شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے کہا کہ سیکریٹری خزانہ عدالت کے روبرو اس کی وضاحت پیش کریں کہ عدالت کے حکم کے باوجود تمام وفاقی ملازمین کو الاو¿نس دیئے جانے کا نوٹی فکیشن کیوں جاری نہیں کیا گیا اور عدالتی حکم عدولی پر ان کے خلاف کیوں نہ توہین عدالت کی کارروائی کی جائے۔واضح رہے کہ سابق وزیر اعظم کی جانب سے کابینہ ڈویژن اور سینیٹ سیکرٹریٹ سمیت بعض وفاقی اداروں کے ملازمین کے الاو¿نس میں اضافے کا اعلان کیا گیا جس پر عدالت نے حکم دیا تھا کہ تمام وفاقی ملازمین کو20 فیصد الاو¿نس دیئے جانے کا نوٹی فکیشن جاری کیا جائے۔

مزید :

اسلام آباد -