استصواب رائے سے قبل پاکستان گلگت، بلتستان اور زیر انتظام کشمیر خالی کرے:بھیم سنگھ

استصواب رائے سے قبل پاکستان گلگت، بلتستان اور زیر انتظام کشمیر خالی ...

  

جموں(کے پی آئی)جموں وکشمیر نیشنل پنتھرس پارٹی کے سرپرست پروفیسر بھیم سنگھ نے پاکستان کے وزیراعظم نواز شریف سے کہا ہے کہ پاکستانی زیر انتظام کشمیر علاقہ کو خالی کیاجائے تاکہ ریاست میں استصواب رائے کیاجاسکی۔ ایک بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ پاکستان جان بوجھ کر 13 اگست، 1948کی اقوام متحدہ کی قرارداد کی خلاف ورزی کررہا ہے جس میں اسے ہدایت دی گئی تھی کہ وہ جموں وکشمیر کا تمام علاقہ خالی کرے جن میں زیر انتظام کشمیر، گلگت ، بلتستان اور سیاچن شامل ہیں۔

پاکستان 2009میں گلگت ۔بلتستان کے 28ہزار مربع میل علاقہ کو اپنا پانچواں صوبہ اعلان کر چکا ہے جس پر ہندوستانی قیادت کی خاموشی حیرت کن ہی۔ بھیم سنگھ نے کہا کرشنامینن نے 1957میں اقوام متحدہ میں پاکستان سے کہاتھا کہ وہ ریاست میں استصواب رائے سے قبل اقوام متحدہ کی قرارداد کے مطابق تمام علاقوں سے اپنی فوج ہٹائی۔

مزید :

عالمی منظر -