لیڈی ہیلتھ ورکروں کو مستقل کرنے کا اچھا فیصلہ

لیڈی ہیلتھ ورکروں کو مستقل کرنے کا اچھا فیصلہ

  

حکومت پنجاب نے باون ہزار لیڈیز ہیلتھ ورکروں کو مستقل کر دیا ہے۔ یہ خواتین طویل عرصہ سے ایڈہاک ملازم کی حیثیت سے کام کر رہی تھیں اور مستقل کرنے کے لئے مطالبات کرتی تھیں۔ وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے یہ بڑا قدم اٹھایا، ان52ہزار ورکروں کو یکم اکتوبر سے نئے گریڈ کے ساتھ تنخواہیں ملیں گی۔حکومت پنجاب کا یہ اقدام قابل تعریف ہے کہ یہ ہزاروں خاتون کا رکن کسی مستقبل کے تحفظ کے بغیر کام کرتی چلی آ رہی ہی تھیں، ان کی سروس عارضی تھی اور ان کو سالانہ ترقی بھی نہیں ملتی تھی ۔ مستقل کئے جانے کے بعد ان کو تحفظ حاصل ہو گیا اور اب یہ باقاعدہ سرکاری ملازم ہیں وزیر اعلیٰ نے ایک تقریب میں ان خواتین کارکنوں میں مستقلی کے تقرر نامے تقسیم کر کے اعلان کیا، وزیر اعلیٰ کا یہ ایک انقلابی قدم ہے اس سے خزانے پر بوجھ پڑے گا لیکن اس کی فکر نہیں کی گئی اور اب ہیلتھ وزیٹرز عملہ کا باقاعدہ سروس سٹرکچر ہو گا اور ان کی ترقی بھی ہو سکے گی۔ مستقل ہونے والوں میں ہیلتھ سپروائیزر بھی شامل ہیں۔

مزید :

اداریہ -