جعلی میڈیکل سرٹیفکیٹ چسپاں کرنے کا الزام ثابت، جونیئر کلرک کےخلاف مقدمہ درج

جعلی میڈیکل سرٹیفکیٹ چسپاں کرنے کا الزام ثابت، جونیئر کلرک کےخلاف مقدمہ درج

  

لاہور (اپنے نمائندے سے ) بورڈ آف ریونیو کے اسٹنٹ سیکرٹری جنرل کی درخواست پر محکمہ اینٹی کرپشن نے سینئر ممبر کے فیصلے میں جعلی میڈیکل سرٹیفکیٹ چسپاں کرنے کا الزام ثابت ہونے پر جونیئر کلرک کے خلاف مقدمہ درج کرتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کر دیاہے مزید معلوم ہوا ہے کہ سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو پنجاب کے فیصلے میں جعلی ٹیمپر شدہ میڈیکل سرٹیفکیٹ چساں کرنے کے انکشاف پر تحقیقات کی گئی تو معلوم ہوا کہ بورڈ آف ریونیو کے جونیئر کلرک ذیشان قمر غازی ان حرکات میں ملوث پایا گیا ہے جس پر اسسٹنٹ جنرل سیکرٹری پنجاب نے محکمہ انٹی کرپشن کو جونیئر کلرک کے خلاف کارروائی کرنے کی درخواست دے دی محکمہ اینٹی کرپشن نے تحقیقات میں الزام ثابت ہونے کی بناءپر ذیشان قمر غازی نامی جونیئر کلرک کے خلاف مقدمہ درج کرتے ہوئے ملزم کی گرفتاری کےلئے ٹیمیں تشکیل دے دی ہیں دوسری طرف ریونیو ذ رائع نے یہ آگاہی دی ہے کہ مذکورہ جونیئر کلرک ذیشان قمر غازی اور اسکے بھائی فرحان قمر قاضی جو کہ ضلع خانیوال میں تعینات تھے سفارشی بنیادوں پر بورڈآف ریونیو میں تعینات کئے گئے ذیشان قمر غازی کو چیف سیٹلمنٹ کمشنر پنجاب کے آفس میں تعینات کر دیا گیا اپنی تعیناتی کے دوران دونوں بھائیوں نے ریکارڈ میں ردوبدل اور فیصلوں میں ٹمپرنگ کرنے کی انتہا کر دی جس کی سینکڑوں درخواستیں شہریوں کی جانب سے سینئر ممبر اور سیکرٹر ی ریونیو کو دی گئیں۔

 جس کے بعد بورڈ آف ریونیو کے اعلیٰ افسران نے انکے خلاف قانونی کاروائی کے لئے محکمہ انٹی کرپشن کو درخواستیں بھجوا دی اور انکو بورڈ آف ریونیو ہیڈ کوارٹر سے فارغ کرتے ہوئے دوبارہ انکے ہوم ڈسٹرکٹ خانیوال بھجوا دیا ریونیو ذرائع کا کہنا ہے کہ ان دونوں کلرکوں کی وجہ سے بورڈ آف ریونیو پنجاب کی عمارت بھی بدنامی سے دوچار ہوئی ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -