مہنگی بجلی کے باعث معاشی سرگرمیاں متاثر ہو رہی ہیں،افتخار بشیر

مہنگی بجلی کے باعث معاشی سرگرمیاں متاثر ہو رہی ہیں،افتخار بشیر

  

لاہور(وقائع نگار) تاجر رہنما و صدر گرائنڈنگ ملز ایسوسی ایشن پاکستان چوہدری افتخار بشیرسابق ایگزیکٹو ممبر لاہور چیمبرآف کامرس نے کہا ہے کہ مہنگی بجلی کے باعث معاشی سرگرمیاں متاثر ہورہی ہیں انہوں نے نیپرا کی جانب سے بجلی 29پیسے فی یونٹ سستی کرنے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ بجلی کی قیمت میں کمی اضافوں کی نسبت انتہائی کم ہے ۔انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ آف پاکستان بھی فیول ایڈجسٹمنٹ کا فارمولہ غلط قرار دے چکی ہے ہر ماہ اس مد میں بجلی کے فی یونٹ میں ہوشربا اضافہ کردیا جاتا ہے صنعتی مقاصد کیلئے بجلی کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ ہوچکا ہے جس کے باعث صنعتکار برادری پریشانی کا شکار ہے انہوں نے کہا کہ مہنگی بجلی اور لوڈ شیڈنگ کے باعث انڈسٹریز بند اور بے روزگاری میں اضافہ ہو گا بجلی کی قیمتوں میں اضافہ اور توانائی بحران کے باعث بدترین لوڈشیڈنگ نے انڈسٹری کو بحران میں مبتلا کردیا۔

 افتخار بشیر نے کہا کہ اگر حکومت صنعتی ترقی اور جی ایس پی پلس اسٹیٹس سے بھر پور فائدہ اٹھانا چاہتی ہے تو اس کے لیے انڈسٹریز کو سستی بجلی فراہم کی جائے اورانڈسٹریز کو بجلی ،گیس کی لوڈ شیڈنگ سے مستثنیٰ قرار دیا جائے تاکہ انڈسٹریز اپنی پوری استعداد کے مطابق پیداوار تیار کرکے اندرون ملک اور بیرون میں ارسال کرکے حکومت کے ریونیو میں اضافہ کا باعث بن سکے اس طرح حکومت معاشی بحران سے بھی باہر نکل آئے گی اور زرمبادلہ کے ذخائر میں بھی اضافہ ہوگا ۔نیز بے روزگاری کا مسئلہ بھی حل ہوجائے گا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -