نو ملود بچے کا اغوا، والدین اور رشتے داروں کا گنگا رام ہسپتال کے باہر شدید احتجاج

نو ملود بچے کا اغوا، والدین اور رشتے داروں کا گنگا رام ہسپتال کے باہر شدید ...

  

لاہور(کرائم سیل)سول لائن کے علاقہ گنگا رام ہسپتال سے 4 روز قبل اغوا ہونے والے نومولود بچے کے رشتہ داروں اور والدین نے گنگا رام ہسپتال کے باہر سڑک بلاک کر کے شدید احتجاج کیا، مظاہرین نے ٹائر جلا کر پولیس اور ہسپتال انتظامیہ کیخلاف نعرے بازی کی ،پولیس افسران کی یقین دہانی پر مظاہرین منتشر ہو گئے۔ تفصیلات کے مطابق 24ستمبر کو گنگا رام ہسپتال کے گائنی وارڈ سے سمیرا بی بی کے نومولود بچے کو ایک خاتون اغوا کر کے لے گئی جس کے بعد تھانہ سول لائن میں اغوا کا مقدمہ نمبر 522/14درج کیا گیامگر پولیس اور گنگا رام ہسپتال کی انتظامیہ کے پاس کئی بار چکر لگانے کے باوجود انکا بچہ واپس نہ مل سکا۔ گذشتہ روز بچے کے درجنوں رشتہ دار اور والدین ہسپتال کے باہر اکھٹے ہو گئے ، انہوں نے ہاتھوں میں ڈنڈے اٹھا رکھے تھے ۔ مظاہرین نے ہسپتال کے باہر ٹائر جلا کر سڑک بلاک کر دی اور پولیس اور انتظامیہ کیخلاف شدید نعرے بازی کی۔ مظاہرین کے احتجاج کے باعث گنگا رام کو جانے والے راستے پر ٹریفک جام ہو گئی جس کے باعث پولیس کی بھاری نفری وہاں پہنچ گئی اور مظاہرین کو مطمئن کرنے کیلئے افسران بھی وہاں پہنچ گئے ۔ احتجاج کے دوران مغوی بچے کی والدہ سمیرا بی بی کا کہنا ہے کہ انکا بچہ گنگا رام ہسپتال کے عملہ کی ملی بھگت سے اغوا کیا گیا ہے کیونکہ عملے کی اجازت کے بغیر کوئی عورت اسطرح بچے کو ساتھ نہیں لے جا سکتی۔پولیس افسران نے دو روز میں مغوی بچے کی بازیابی کی یقین دہانی کروائی تو مظاہرین پرُ امن طور پر منتشر ہو گئے۔

مزید :

علاقائی -