امریکہ میں موبائل کی جاسوسی کا پروگرام تیار کرنا پاکستانی کو مہنگا پڑا

امریکہ میں موبائل کی جاسوسی کا پروگرام تیار کرنا پاکستانی کو مہنگا پڑا
امریکہ میں موبائل کی جاسوسی کا پروگرام تیار کرنا پاکستانی کو مہنگا پڑا

  

واشنگٹن (ویب ڈیسک)امریکہ میں موبائل کی جاسوسی کا پروگرام تیار کرنیوالی پاکستانی کمپنی کے سربراہ پر فردجرم عائد کر دی گئی ہے ۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق پاکستانی کمپنی جس نے سٹیلتھ جینی کے نام سے دوسرے لوگوں کے موبائل کی جاسوسی کی موبائل ایپلی کیشن تیار کی تھی، پر امریکہ میں کریمنل فردجرم عائد کر دی گئی ہے۔ جسٹس ڈیپارٹمنٹ نے کہا کہ لاہور کے 31 سالہ حماد اکبر پر موبائل کی جاسوسی ایپلی کیشن بیچنے اور اسکا اشتہار دینے سے متعلق پہلی مرتبہ فرد جرم عائد کی گئی ہے۔ حماد اکبر انوو کوڈ پرائیویٹ لمیٹڈ کا چیف ایگزیکٹو ہے اور اس نے اپنا پروگرام ورجینیا میں آن لائن فروخت کرنے کیلئے اشتہار دیا تھا۔ اسے لاس اینجلس سے گرفتار کیا گیا تھا۔

مزید :

بین الاقوامی -