امراض قلب کے ہسپتال میں بچوں کے سرجن کی اسامیاں خالی

امراض قلب کے ہسپتال میں بچوں کے سرجن کی اسامیاں خالی
 امراض قلب کے ہسپتال میں بچوں کے سرجن کی اسامیاں خالی

  

 فیصل آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)فیصل آبادمیں قائم دل کے ہسپتال میں بچوں کے آپریشن کرنے کے لیے سرجن نہ ہونے سے بچوں کو لاہور چلڈرن ہسپتال میں علاج کے لیے کئی کئی ماہ انتظار کرنا پڑتا ہے۔ اس دوران کئی بچے جان سے چلے جاتے ہیں۔تفصیلات کے مطابق انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی فیصل آباد میں بچوں کے امراض کا محدود علاج ہوتا ہے۔ اوپن ہارٹ سرجری کی سہولت موجود ہے لیکن بچوں کے ماہر ڈاکٹرزاور پیرامیڈیکل سٹاف کی کمی ہے۔ماہر امراض قلب ڈاکٹر عبدالرزاق کا کہنا ہے کہ ہمارے پاس بنیادی انفرااسٹرکچر موجود نہیں ہے،فزیشن کے علاوہ بچوں کے ماہر ڈاکٹر،آئی سی یو کارڈیک سرجن کی کمی ہے۔ دل کے امراض میں مبتلا بچوں کے والدین نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ انسٹیٹیوٹ آف کار ڈیالوجی میں تین سال سے خالی اسامیوں پر بچوں کے ماہر ڈاکٹرز اور سرجن کی تقرری عمل میں لائی جائے تاکہ علاج کے منتظر بچوں اور والدین کو مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

مزید :

تعلیم و صحت -