یہ ٹیچر سکول کی پارٹیوں میں اس طرح کی شرمناک حرکتیں کرتا رہا کہ جان کر آپ کانوں کو ہاتھ لگائیں گے

یہ ٹیچر سکول کی پارٹیوں میں اس طرح کی شرمناک حرکتیں کرتا رہا کہ جان کر آپ ...
یہ ٹیچر سکول کی پارٹیوں میں اس طرح کی شرمناک حرکتیں کرتا رہا کہ جان کر آپ کانوں کو ہاتھ لگائیں گے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لندن (نیوز ڈیسک)تعلیم کے ساتھ تفریح بھی بہت ضروری ہے اور اسی مقصد کے لئے اکثر تعلیمی ادارے باقاعدگی سے تفریحی دوروں کا اہتمام کرتے ہیں، مگر برطانیہ کے ایک سکول کے اساتذہ ایسے تفریحی دورے پر نکل گئے کہ جس کی تفصیلات سامنے آئیں تو ہر کوئی توبہ توبہ کراٹھا۔
میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق مائس ایب سکول کا سینئر ٹیچر راب ڈکنسن اپنے چند ساتھی اساتذہ اور 9عدد جونیئر خواتین ٹیچرز کو لے کر تفریحی دورے پر روانہ ہوا، جس کا مقصد اساتذہ کے درمیان تعاون کو فروغ دینا اور ٹیم سازی کی صلاحیتوں کو نکھارنا تھا۔ تفریحی دورے پر جانے والی 9 جونیئر ٹیچرز میں سے چار شادی شدہ تھیں جبکہ ایک طلاق یافتہ خاتون ٹیچر بھی اس گروپ کا حصہ تھی۔ اس دورے کے دوران ٹیم سازی سے متعلق تو کچھ ہوا یا نہیں البتہ ان تمام خواتین اور مردوں نے مل کر فحاشی اور بے حیائی کے تمام ریکارڈ توڑدئیے۔

مسلمان ٹیچر برطانیہ میں نوجوان سٹوڈنٹ کے ساتھ عشق لڑاتارہا، جب پولیس نے دھرلیا تو ایسی بات کہہ دی کہ جان کر کوئی بھی یقین نہ کرے
ان ٹیچرز کے تفریحی دورے کی شرمناک تفصیلات اس وقت سامنے آئیں جب سکول کے کیمرے میں ان کی 1200 سے زائد تصاویر کا انکشاف ہوا، جنہیں دورے سے واپسی کے بعد ڈیلیٹ نہیں کیا گیا تھا۔ سکول انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ان سینکڑوں تصاویر میں مرد اور خواتین ٹیچرز بکثرت بے حیائی کے مناظر میں مصروف نظر آتے ہیں۔ تقریباً تمام تصاویر میں ہی وہ انتہائی مختصر یا بغیر لباس کے نظر آتے ہیں۔ کہیں کمروں کے اندر تو کہیں چھتوں پر اور کہیں باغیچوں میں بے حیائی کے مناظر دکھائی دیتے ہیں۔
نیوپورٹ میں واقع سکول کی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ان کے وہم و گمان میں بھی نہیں تھا کہ سینئر ٹیچر راب ڈکنسن کی قیادت میں جانے والی ٹیچرز کی ٹیم ایسی بے حیائی میں مصروف رہی ہوگی۔ اس تمام معاملے کا انکشاف بھی اسی لئے ہوپایا کہ راب ڈکنسن کیمرے میں موجود تصاویر ڈیلیٹ کرنا بھول گئے تھے۔ سکول انتظامیہ کی شکایت پر معاملہ عدالت میں پہنچ گیا جہاں خواتین ٹیچرز نے روتے ہوئے اعتراف کیا کہ انہوں نے تفریحی دورے کے دوران جو کچھ کیا وہ انتہائی وحشیانہ اور قابل مذمت تھا۔ بے حیا ٹیچرز کے خلاف انضباطی کاروائی جاری ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -