قرۃ العین بلوچ بالی ووڈ کیلئے گانے والے گلوکاروں کی فہرست میں شامل

قرۃ العین بلوچ بالی ووڈ کیلئے گانے والے گلوکاروں کی فہرست میں شامل

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(فلم رپورٹر)بالی ووڈ کے لئے گانے والے پاکستانی گلوکاروں کی فہرست میں ایک اور نام کا اضافہ ہو گیا ہے اور وہ نام معروف گلوکارہ قرۃ العین بلوچ کا ہے۔جنہوں نے بالی وڈ کے ’شہنشاہ‘ کہے جانے والے اداکار امیتابھ بچن کی فلم ’پنک‘ کے گیت ’’کاری کاری رینا ساری‘‘ میں اپنی آواز کا جادو جگایا ہے ۔اس گیت کو نیشنل انعام یافتہ نغمہ نگار اور مصنف تنویر غازی نے لکھا جسے گذشتہ روز باضابطہ طور پر ریلیز کیا گیا۔ یہ فلم کا دوسرا نغمہ ہے۔ اس سے قبل ’جینے دے مجھے‘ ریلیز کیا گیا تھا۔امیتابھ بچن نے گیت کے بارے میں ٹویٹ کیا ہیکہ’’بلند آہنگ کا گیت ’کاری کاری‘ پراز معنی، فیصلہ کن اور ہرطرح سے مکمل ہے۔
‘ٹائمز میوزک نے اپنے ایک ٹویٹ میں لکھا کہ ’قراۃالعین کا گیت کاری کاری سرحدوں کے دونوں پار کے لیے امید کا گیت ہے‘ اور یہ امید ظاہر کی کہ قرۃ العین کی سنسنی خیز اور جذباتی آواز میں فلم’’ پنک‘‘ کا یہ گیت لاکھوں دلوں کو پسند آئے گا۔فلم ’’پنک ‘‘میں امیتابھ بچن نے ایک وکیل کا کردار ادا کیا ہے جو تین مظلوم لڑکیوں کا مقدمہ لڑتے ہیں۔سرحدوں پر خواہ کشیدگی کیوں نہ ہو سیاست اپنا کوئی بھی کھیل کھیلے لیکن فن اپنا راستہ تلاش کر ہی لیتا اور اسے اس کے پرستار مل ہی جاتے ہیں کیونکہ ریلیز کے بعد اس گیت کو یوٹیوب پر تقریباً 15 لاکھ بار سنا جا چکا ہے۔جہاں کبھی نور جہاں، مہدی حسن، غلام علی اور نصرت فتح علی خان کی آوازوں کا جادو سر چڑھ کر بولا وہیں دور جدید میں عاطف اسلم، علی ظفر، عدنان سمیع، عابدہ پروین اور راحت فتح علی خان کی آوازیں بالی وڈ میں گونج رہی ہیں۔ قرۃ العین بلوچ اس میں فہرست میں ایک گرانقدر اضافہ تصور کی جا سکتی ہیں۔فلم ناقدین کا خیال ہے کہ کیو بی کی پختہ آواز میں یہ دل گداز گیت فلم کے مافی الضمیر کی ترجمانی کرتا ہے۔گیت کو تین نئی اداکاراؤں تاپسی پنو، کرتی کلکرنی اور آندریا تارنگ پر فلمایا گیا ہے جو کہ فلم ’پنک‘ میں اہم کردار نبھا رہی ہیں۔گیت میں ’تتلیوں کے پنکھوں پر، رکھ دیے گئے پتھر، اے خدا تو گم ہے کہاں‘‘جیسے معنی خیز الفاظ خواتین کی بے چارگی کے عکاس ہیں اور گیت کو دھیمے لہجے اور دھن نے مزید دلدوز بنا دیا ہے۔یاد رہیکہ کوک سٹوڈیو کے لیے قرۃ العین کے گائے گیت ’بے وفائیاں‘ اور ’پنچھی ہوں اڑنے دو‘ بھی خاصے پسند کیے گئے ہیں۔’’پنک‘‘ کی ہدایتکاری بنگالی فلم ساز انیردھ رائے چوہدری نے کی جنھیں فلم ’انت ہین‘ کے لئے نیشنل ایوارڈ دیا گیا تھا۔

مزید :

کلچر -