یکم جنوری 2017تک پنجاب کے تمام تھانوں میں ایف آئی آر کو کمپیوٹرائز کردیا جائیگا

یکم جنوری 2017تک پنجاب کے تمام تھانوں میں ایف آئی آر کو کمپیوٹرائز کردیا ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(کرائم رپورٹر) انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب، مشتاق احمد سکھیرانے کہاکہ پنجاب پولیس میں شروع کیے گئے آئی ٹی پراجیکٹس کی اپ گریڈیشن،پنجاب کے 715تھانوں میں روزنامچہ اور FIRکو یکم جنوری تک آن لائن کرنے، پولیس کے محکمانہ ریڈ ایبل شناختی کارڈ کے ڈیزائن کو حتمی شکل دینے کے لئے ہر ممکن اقدامات کئے جائیں خاص طور پر یکم دسمبر 2016 ؁ء تک پنجاب میں بائیو میٹرک حاضری سسٹم کے نظام کو سنٹرلائزڈ کرنے پربھرپورتوجہ دی جائے۔اجلاس میں چےئرمین پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ،عمر سیف، ڈی آئی جی I.T، شاہد حنیف،ڈی آئی جی آپریشنز، عامر ذوالفقار،ڈی آئی جی ہیڈ کوارٹرز، بی اے ناصر، اے آئی جی ڈویلپمنٹ، کامران خان، اے آئی جی فنانس، حسین حبیب امتیاز، اے آئی جی آپریشنز، شہزادہ سلطان، اے آئی جی لاجسٹکس ہمایوں بشیر تارڑ ، اے آئی جی مانیٹرنگ، غازی صلاح الدین اور ڈائریکٹر کمپیوٹر بیورو، شاہین خالد کے علاوہ سی پی او کے دیگر افسران نے شرکت کی۔ اجلاس میں آئی جی پنجاب کو بتایا گیا کہ یکم جنوری 2017 ؁ء تک پنجاب کے تمام تھانوں میں روزنامچہ اور ایف آئی آر کو کمپیوٹرائزڈ کر دیا جائے گاجو آن لائن بھی دستیاب ہو گااور اس پراجیکٹ پر آئی ٹی بورڈ کی راہنمائی میں کام تیزی سے جاری ہے۔اس موقع پر ڈاکٹر عمر سیف چےئرمین آئی ٹی بورڈ نے پنجاب پولیس میں آئی ٹی کے شروع کردہ مختلف پراجیکٹس ہیومن ریسورس مینجمنٹ سسٹم ، کریمینل ریکارڈ مینجمنٹ سسٹم، بائیو میٹرک حاضری سسٹم، ہومی سائیڈ یونٹس، 8787 پبلک کمپلینٹ سسٹم کو سراہتے ہوئے کہا کہ پنجاب پولیس نے جس طرح آئی ٹی بورڈ کے اشتراک سے ان پراجیکٹس کو شروع کیا اور جس طرح دلچسپی سے انہیں اپ گریڈ کیا جا رہا ہے وہ یقیناًقابل ستائش ہے اوران پراجیکٹس کے حوصلہ افزا نتائج سامنے آرہے ہیں۔پنجاب پولیس میں بائیو میٹرک حاضری سسٹم کے نظام کو سنٹرلائزڈ کرنے کے پراجیکٹ کے حوالے سے آئی جی پنجاب کو بریفنگ دیتے ہوئے ڈاکٹر عمر سیف نے بتایا کہ اس پراجیکٹ پر بھی کام تیزی سے جاری ہے اور یکم دسمبر تک پنجاب میںیہ سنٹرلائزڈ سسٹم کام شروع کر دے گاجس کے تحت ایک ہی جگہ سے پنجاب بھر کی پولیس فورس کی حاضری کو مانیٹر کیا جا سکے گا۔

مزید :

علاقائی -