ایل او سی پر کشیدگی ، واہگہ بارڈر پر تقریب پرچم کشائی میں عوامی جزبہ دیدنی سرحد پار ،موت کی خاموشی

ایل او سی پر کشیدگی ، واہگہ بارڈر پر تقریب پرچم کشائی میں عوامی جزبہ دیدنی ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

با ٹا پور نا مہ نگا ر (بشیر احمد بھٹی)واہگہ بارڈ رپر گز شتہ شام پر چم کشا ئی کی تقر یب میں زبر دست جو ش و جذ بہ سے پا کستان زند ہ آ باد،پاک فوج زندہ آ باد کے نعرے ، جس میں ڈی جی رینجر میجر جنر ل عمر فاروق سمیت دیگررینجر کے اعلیٰ احکا م اور پی ٹی آ ئی کے مر کزی رہنما ء شا ہ محمو د قر یشی سمیت سینکڑو ں لوگو ں نے شرکت کی ، جبکہ جنگی خو ف کی وجہ سے بھا رت کی طر ف سے صرف چند افراد پر چم کشا ئی کی تقر یب دیکھنے آ ئے ۔ پاکستان کی عوا م نے پا کستان زند ہ آباد، پا ک فوج زند ہ آ باد ، پا ک رینجر زند ہ آ باد کے جذ با تی نعرے لگا ئے، پاکستا نی عوا م کی طر ف سے نعر وں کی گونج نے بھا رتی فو ج کے جوا نوں پر خو ف کا عا لم طاری کر دیا ،پر چم کشا ئی کی تقر یب کے بعد ڈی جی رینجر نے بارڈر کے علا قے کا دورہ کیا اور جوا نوں سے ملے۔تفصیلات کے مطابق بھارت کی جانب سے سرحد پر جارحیت کے بعد پاک فوج کا حوصلہ بڑھانے ڈی جی رینجرز پنجاب سمیت ہزاروں پاکستانی واہگہ بارڈ پر پرچم کشائی کی تقریب میں پہنچ گئے جبکہ بھارتی سائیڈ پر موت کی خاموشی چھائی رہی۔اس سے قبل بھارتی فورسز کی جانب سے لائن آف کنٹرول پر اشتعال انگیزی کی گئی جس کے نتیجے میں 2 جوانوں سمیت 3 افراد شہید ہوگئے جبکہ پاک فوج کی جوابی کارروائی میں 3 بھارتی چوکیاں تباہ ہوگئیں۔ ایل او سی پر ہونے والی کشیدگی کے بعد پاکستانی عوام نے بلند حوصلے کا مظاہرہ کیا اور ہزاروں کی تعداد میں واہگہ بارڈر پر پرچم کشائی کی تقریب میں شرکت کیلئے پہنچ گئے۔پرچم کشائی کی تقریب میں ڈی جی رینجرز پنجاب نے بھی شرکت کی اور انتہائی اگلی طرف بیٹھ کر پریڈ دیکھی۔ واہگہ بارڈر پر پریڈ کے دوران نعرہ تکبیر اور پاکستان زندہ باد کے نعرے لگتے رہے جبکہ پاکستانی عوام نے پاک فوج کے جوانوں سے بھرپور اظہار یکجہتی کیا۔دوسری جانب بھارتی فوجی اکیلے ہی بارڈر پر موجودتھے اور ان کا حوصلہ بڑھانے کیلئے کوئی بھی شہری نہیں تھا۔ بھارتی کرسیاں خالی پڑی رہیں اور وہاں موت کی سی خاموشی چھائی رہی۔ پاکستانی قوم نے ایک بار پھر واہگہ بارڈر پر پرچم کشائی کی تقریب میں شرکت کرکے واضح کردیا ہے کہ یہ کسی کی گیدڑ بھبکیوں سے ڈرنے والے نہیں ہیں اور ان میں جذبہ شہادت کسی بھی دوسری قوم سے کہیں زیادہ ہے اور کبھی بھی وقت آیا تو یہ 1965 کی جنگ کی طرح پاک فوج کے شانہ بشانہ لڑیں گے اور شہادت کی موت کو بخوشی گلے لگائیں گے۔واضح رہے کہ نومبر 2014 میں واہگہ بارڈ ر پر خودکش حملے کے نتیجے میں 60 سے زائد افراد شہید ہوگئے تھے۔ دھماکے کے اگلے روز بھارت کی جانب سے پھر بزدلی دکھائی گئی اور کوئی شہری پرچم کشائی کی تقریب میں شریک نہیں ہوا جبکہ پاکستانی عوام اور میڈیا نے پاک فوج کا خوب حوصلہ بڑھایا اور ریکارڈ تعداد میں تقریب میں شرکت کرکے دشمنوں کو واضح پیغام دے دیا کہ ہم زندہ قوم ہیں جو ہر قسم کے خطرے سے نمٹنے کیلئے تیار ہیں۔

مزید :

صفحہ اول -