مستقل کرنے کے وعدے پھر ٹال مٹول، واٹر منیجمنٹ ملازمین کے صوبہ بھر میں مظاہرے

مستقل کرنے کے وعدے پھر ٹال مٹول، واٹر منیجمنٹ ملازمین کے صوبہ بھر میں مظاہرے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


ملتان، وہاڑی ، مظفرگڑھ ، پیرجہانیاں ، لودھراں (سپیشل رپورٹر،بیورو رپورٹ ، نمائندہ خصوصی، نمائندہ پاکستان ، نامہ نگار)آل پنجاب واٹر مینجمنٹ اپملائز ایسوسی ایشن کی کال پر صوبہ بھر میں کنٹریکٹ ملازمین کے مستقل کیے جانے کیلئے مظاہرے ، دفاتر میں ہڑتالیں، دھرنے اورریلیاں بھی نکالی گئیں۔ملتان سے سپیشل رپورٹر کے مطابق آل پنجاب واٹر مینجمنٹ ایمپلائز ایسوسی ایشن کی کا ل پر صوبہ بھر کی طرح ملتان میں بھی واٹر مینجمنٹ کے کنٹریکٹ ملازمین نے گزشتہ روز ملتان پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا ۔کنٹریکٹ ملازمین نے بازوؤں پر سیاہ پٹیاں باندھ رکھی تھیں اور مستقلی کے حق میں نعرے (بقیہ نمبر12صفحہ12پر )
لگارہے تھے ۔مظاہرہ سے خطاب کرتے ہوئے ضلعی صدر واٹر مینجمنٹ ملتان سعید اظہر گیلانی اور جنرل سیکرٹری محمد شاہد لکھویرا نے کہا کہ صوبہ بھر میں محکمہ زراعت کے شعبہ واٹر مینجمنٹ کے 18سو سے زائد ملازمین گزشتہ کئی سالوں سے مستقلی کے منتظر ہیں اور حکومت ہر بار انھیں مستقل کرنے کا وعدہ کرکے ٹال مٹول سے کا م لے رہی ہے ۔انھوں نے کہا کہ ایسوسی ایشن کی جانب سے صوبہ بھرمیں کام چھوڑ ہڑتال کاسلسلہ جاری ہے جو مستقلی کا نوٹیفکیشن جاری ہونے تک جاری رہے گا۔وہاڑی سے بیورو رپورٹ اورنمائندہ خصوصی ک مطابق وہاڑی میں ملا زمین ریگولر نہ کیے جانے پر مکمل ہڑتال ، احتجاجی ریلی اور دھرنا، ریلی کی قیادت ضلعی صدر احمد، تحصیل صدر میاں محمد اختراور غلام ربانی نے کی ریلی میں فیض رسول ، ساجدانور، محمد آصف سمیت ملازمین کی کثیر تعداد نے شر کت کی ریلی واٹر مینجمنٹ آفس سے شروع ہوئی اور مختلف راستوں سے ہو تی ہوئی جب قائداعظم چوک پہنچی تو ضلعی صدر احمدرضا ، تحصیل صدر میاں محمداختر اور ضلعی صدر غلام ربانی ودیگر نے خطاب کیا ۔ریلی کے شرکاء نے قائد اعظم چوک پر دھرنا دیا جس کی وجہ سے ٹریفک بلاک ہوئی اور گاڑیوں کی لمبلی لا ئنیں لگ گئی مظاہرین نے اپنے مطالبات کے حق میں اور حکومت پنجاب کے خلاف شدید نعرے بازی کی انہوں نے دھمکی دی اگر ہمیں مستقل نہ کیا گیا تو ہزار خاندانوں سمیت پنجاب اسمبلی کے سامنے خودسوزیاں کرلیں گے۔مظفرگڑھ سے نمائندہ پاکستا ن کے مطابق مظفرگڑھ واٹر منیجمنٹ کے ملازمین کا احتجاج چوتھے روز بھی جاری ۔گزشتہ دن واٹر منیجمنٹ کے ملازمین نے مظفرگڑھ پریس کلب کے سامنے احتجاج کیا ۔مظاہرین میں ضلعی صدر محبوب حسن ،امتیاز حسین،محمد رفیق،ظفر اللہ ،غلام عباس سہرانی ،عاصم مہدی،شہزاد انور،ودیگر کا کہنا تھا کہ حکومت ہمارے ساتھ مسلسل ناانصا فی کر رہی ہے۔پیر جہانیاں سے نامہ نگار کے مطابق حکومت نے دوسرے محکموں کے کنٹریکٹ ملازمین کو تو مستقل کردیا مگر محکمہ واٹر منیجمنٹ کے ملازمین کو مستقل نہیں کیاجارہا۔ہم مستقل کئے جانے تک اپنی کام چھوڑ ہڑتال جاری رکھیں گے۔لودھراں سے نمائندپاکستان کے مطابقلودھراں(نما ئند ہ پا کستا ن) آل پنجاب واٹرمنیجمنٹ ایمپلائز ایسوسی ایشن (ایپوامیا)کی کال پر پنجاب بھر کی طرح ضلع لودہراں کے ملازمین نے ضلعی آفس سے پریس کلب تک احتجاجی ریلی نکالی جس کی قیادت ضلعی صدر راؤ طاہر ایوب نے کی ریلی کے شرکاء نے بازؤں پر سیاہ پٹیاں باندھ رکھی تھیں جبکہ ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بینرز اٹھا رکھے تھے جن پر مختلف نعرے درج تھے۔ ضلعی صدر راؤ طاہر ایوب نے ریلی کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ4 اپریل 2010 کو پنجاب اسمبلی کے باہر ان ملازمین سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر زراعت احمد علی اولکھ نے ایک ہفتہ کے اندر ریگولر کرنے کا وعدہ کیاتھا جو تاحال وفا نا ہوسکا۔اسپیکر پنجاب اسمبلی کی ہدایت پر صوبائی وزیر ملک ندیم کامران کی سربراہی میں قائم پارلیمانی کمیٹی نے ان ملازمین کا حق تسلیم کرتے ہوئے انہیں ریگولر کرنے کی تحریری سفارش کی جس پر آج تک عمل نہیں ہوسکا۔دریں اثنا خادم اعلٰی پنجاب جناب شہباز شریف صاحب کے خصوصی حکم پر پنجاب بھر کے لاکھوں کنٹریکٹ ملازمین جن میں پراجیکٹ ملازمین بھی شامل ہیں مستقل کئے جاچکے ہیں جبکہ واٹرمنیجمنٹ کے ان ملازمین کو ہر بار نظرانداز کردیا جاتا ہے۔مزید یہ کہ ان ملازمین کے ساتھ بھرتی ہونے والے واٹرمنیجمنٹ کے دیگر صوبوں کے ملازمین ریگولر کئے جاچکے ہیں جن میں سندھ، خیبر پختونخواہ، بلوچستان اور گلگت بلتستان کے واٹر منیجمنٹ پروجیکٹ ملازمین شامل ہیں۔جبکہ پنجاب کے یہ ملازمین تاحال اپنے حق کے لئے منتظر ہیں وہ بارہ سال کنٹریکٹ پر کام کررہے ہیں لہذا انہیں بھی پنجاب بھر کے دیگر ملازمین کی طرح مستقل کیا جائے۔
واٹر مینجمنٹ