غلطی سے سرحد پار کرنے والے گرفتار فوجی کی رہائی کے لئے سرکاری طور پر پاکستان سے بات کریں گے :بھارتی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ

غلطی سے سرحد پار کرنے والے گرفتار فوجی کی رہائی کے لئے سرکاری طور پر پاکستان ...
غلطی سے سرحد پار کرنے والے گرفتار فوجی کی رہائی کے لئے سرکاری طور پر پاکستان سے بات کریں گے :بھارتی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک)لائن آف کنٹرول پر بھارتی فوج کی بلا اشتعال فائرنگ اور پاکستان کے جوابی کاری وار نے بھارتی حکومت کے اوسان خطا کر دیئے ہیں ،بلا اشتعال جارحیت کو سرجیکل سٹرائیک کانام دینے والی مودی سرکار پاکستانی فوج کے بھر پور وار سے ابھی تک سنبھل نہیں پائی ،بھارتی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ ہندوستان اپنے فوجی کو رہا کرانے کا مسئلہ سرکاری طور پر پاکستان کے سامنے اٹھائے گا۔

بھارتی نجی چینل ’’این ڈی ٹی وی ‘‘ کے مطابق انڈین وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ ہماری فوج کے مطابق چندو بابو لال چوہان نامی فوجی غلطی سے لائن آف کنٹرول کے پار چلا گیا تھا جسے پاک فوج نے گرفتار کر لیا تھا ،ہم اپنے فوجی کی واپسی کے لئے باضابطہ طور پر پاکستانی حکومت کے سامنے مسئلہ اٹھائیں گے اور بابو لال کی واپسی کا مطالبہ کریں گے ۔دوسری طرف بھارتی فوج کا کہنا ہے کہ چندو چوہان سرجیکل سٹرائیک کا حصہ نہیں تھا ،یہ آرمی چیک پوسٹ پر ڈیوٹی دے رہا تھا اور اتفاقی طور پر ایل او سی کے پار چلا گیا ،بھارتی فوج کا کہنا ہے کہ ایسا پہلی بار نہیں ہوا دونوں ممالک کے فوجیوں کا راہ بھٹکنا اور ایک دوسرے کے علاقے میں غلطی سے چلے جانا کوئی نئی بات نہیں ہے ،اکثر ایسا اس لئے بھی ہوتا ہے کہ دونوں اطراف ایک جیسے جنگل اور پہاڑ ہیں ،دونوں ممالک کی ہونے والی میٹنگوں میں اکثر ایسے مسائل اٹھائے جاتے ہیں اور غلطی سے ایل او سی کراس کرنے والے فوجیوں کو واپس لوٹا دیا جاتا ہے ۔بھارتی ٹی وی کا کہنا تھا کہ چندو چوہان کی گرفتاری کا معاملہ سرجیکل سٹرائیک کے بعد کچھ پچیدہ ہو چکا ہے ۔یاد رہے کہ بھارت نے دعوی کیا تھا کہ اس کی فوج نے پاکستانی حدود کے دو کلو میٹر اندر داخل ہو کر سرجیکل سٹرائیک کی ہے اور دہشت گردوں کے 7لانچنگ پیڈ اور ٹھکانوں کو نشانہ بنایا ہے جبکہ پاکستان نے سرے سے ہی بھارتی دعویٰ مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ انڈین آرمی نے لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی کرتے ہوئے بلا اشتعال فائر نگ کی جس سے دو پاکستانی فوجی شہید ہو گئے تھے جس کے بعد پاکستانی فوج نے جوابی وار کرتے ہوئے 14بھارتی فوجیوں کو جہنم رسید کرتے ہوئے ایک بھارتی فوھی چندو لال بابو چوہان کو گرفتار کر لیا تھا ۔