فیصل آباد میں پولیس کے کچھ افسران نے زبردستی اسٹیج پر آ کر پروگرام خراب کرنے کی کوشش کی ، پولیس کا موقف بے بنیاد ہے :امیر العظیم

فیصل آباد میں پولیس کے کچھ افسران نے زبردستی اسٹیج پر آ کر پروگرام خراب کرنے ...
فیصل آباد میں پولیس کے کچھ افسران نے زبردستی اسٹیج پر آ کر پروگرام خراب کرنے کی کوشش کی ، پولیس کا موقف بے بنیاد ہے :امیر العظیم

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

فیصل آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)جماعت اسلامی پاکستان کے ترجمان امیر العظیم نے فیصل آباد میں جماعت اسلامی کے جلسہ میں  پولیس کے ساتھ ہونے والی بدمزگی اور نا خوشگوار واقعہ  کی وضاحت کرتے ہوئے کہا ہے کہ  فیصل آباد کی ضلعی انتظامیہ نے جماعت اسلامی فیصل آباد کو دھوبی گھاٹ میں جلسہ کرنے کی اجازت نہیں دی تھی اور نہ ہی ضلعی انتظامیہ چاہتی تھی کہ جماعت اسلامی چنیوٹ بازار میں جلسہ کرے۔

پولیس انتظامیہ کی طرف سے بھی جماعت اسلامی کے ساتھ الجھاؤ کی فضا موجود تھی تاکہ ہر صورت میں جلسے کو روکا جا سکے، ایسے میں جب جلسے کا باقاعدہ آغاز ہو چکا تھا تو پولیس کے کچھ افسران نے زبردستی اسٹیج پر آ کر پروگرام کو خراب کرنے کی کوشش کی اور میڈیا میں یہ جواز پیش کیا کہ امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق کے گارڈ کے پاس ناجائز اسلحہ تھا جس پر ان سے جواب طلبی کرنے پر تلخی ہوئی۔ امیر العظیم نے پولیس کے اس مو قف کی سختی سے تردید کرتے ہوئے کہا کہ امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق کے ساتھ ایک گارڈ کے پی کے گورنمنٹ کی طرف سے دیا گیا ہے جو کہ کے پی کے پولیس کا ملازم ہے اور گورنمنٹ کی طرف سے لائسنس شدہ گن کے ساتھ ڈیوٹی سرانجام دیتا ہے۔ انھوں نے وضاحت کی کہ سراج الحق کے ساتھ کوئی پرائیویٹ سیکیورٹی نہیں ہے۔

مزید :

فیصل آباد -