مادرِ وطن پر ایک اور نوجوان افسر قربان!

مادرِ وطن پر ایک اور نوجوان افسر قربان!

  

پاک فوج کے ایک اور نوجوان افسر کیپٹن عبداللہ ظفر ملکی حفاظت میں شہادت کا درجہ پا گئے۔ کیپٹن ظفر ایک پٹرولنگ پارٹی کے انچارج تھے، جو رات کو جنوبی وزیرستان کے علاقے شکئی میں گشت کر رہی تھی، دہشت گردوں نے جو چھپے ہوئے تھے، اچانک فائرنگ کی،اس سے کیپٹن شہید ہوئے اور دوسرے جوان زخمی ہو گئے۔ آئی ایس پی آر کے مطابق پاک فوج نے شہید اور زخمیوں کو ہسپتال منتقل کیا اور علاقے کی ناکہ بندی کر کے دہشت گردوں کی تلاش شروع کر دی ہے، پاک فوج کے اس نوجوان کا تعلق کوہاٹ کے علاقے لاچی سے تھا۔وزیرستان سے دہشت گردوں کو نکالنے اور امن بحال کرنے کے لئے پاک فوج نے بہت محنت کی اور مسلسل قربانیاں دی ہیں۔اس وجہ سے مجموعی طور پر امن بحال ہو چکا تاہم دہشت گرد اب حکمت ِ عملی تبدیل کر کے سرحد پار چلے جاتے اور  وہاں سے واپس آ کر چھاپہ مار کارروائی کرتے ہیں۔ پاک فوج پور ے علاقے میں مستعد ہے تاہم اکثر اچانک حملے میں شہادت بھی ہو جاتی ہے اور یہ شہادت بھی ایسے ہی حملے کے باعث ہوئی،فوج اب پھر سے پورے علاقے میں دہشت گردوں کی تلاش میں ہے۔ شہید ہونے والوں کو خراجِ عقیدت پیش کیا جا رہا ہے، وزیرستان کے عوام نے ایسے حملوں اور دہشت گردوں کی مذمت کی،جو امن کو تباہ کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ پاک فوج کی طرف سے دہشت گردی کے خلاف موثر کارروائیوں کو عالمی سطح پر بھی  سراہا جاتا ہے۔

مزید :

رائے -اداریہ -