”میری بہن نے مجھے نیند کی گولی دے کر جسم فروشی کے لیے بیچنے کی کوشش کی“ معروف گلوکارہ نے اپنی زندگی کی حیران کن کہانی سب کو سنا دی

”میری بہن نے مجھے نیند کی گولی دے کر جسم فروشی کے لیے بیچنے کی کوشش کی“ معروف ...
”میری بہن نے مجھے نیند کی گولی دے کر جسم فروشی کے لیے بیچنے کی کوشش کی“ معروف گلوکارہ نے اپنی زندگی کی حیران کن کہانی سب کو سنا دی

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی گلوکارہ ماریا کیری نے اپنی یادداشتوں پر مبنی ایک کتاب تصنیف کی ہے جس میں انہوں نے اپنی زندگی کے کچھ ایسے افسوسناک گوشوں سے اپنے مداحوں کو متعارف کرایا ہے کہ ہر پڑھنے والا دنگ رہ گیا کہ آج لگژری زندگی جینے والی 50سالہ گلوکارہ زندگی میں ایسے تاریک ادوار سے بھی گزر چکی ہے۔ میل آن لائن کے مطابق ماریا کیری نے اپنی کتاب میں بتایا ہے کہ کیسے اس کی اپنی بہن نے اسے نشہ دے کر جسم فروشی کا دھندہ کرانے والے ایک دلال کے ہاتھوں فروخت کرنے کی کوشش کی اور کس طرح وہ اپنے شوہر کے ذہنی و جسمانی استحصال کو سالہا سال تک سہتی رہی اور کس طرح اس کی ماں کا بوائے فرینڈ اسے ٹکڑے ٹکڑے کر دینے کی دھمکیاں دیتا رہا۔

رپورٹ کے مطابق ماریا اپنی کتاب میں لکھتی ہے کہ اس وقت میری عمر صرف 12سال تھی جب میری بڑی بہن الیسن نے مجھے کوکین اور دیگر منشیات کا عادی بنا دیا۔ ایک روز اس نے مجھے منشیات اور نیند کی گولیاں دیں اور میرے جسم کو گرم لوہے سے داغتی رہی اور پھر مجھے ایک دلال کے ہاتھ فروخت کرنے کی کوشش کی۔ اس دلال کا نام جان تھا اور میری بہن اس کے لیے لڑکیاں تلاش کرتی تھی۔ الیسن اس روز مجھے جان کے ساتھ گاڑی میں جان بوجھ کر اکیلا چھوڑ کر چلی گئی تھی اور اس کے جاتے ہی جان نے میرے ساتھ جنسی زیادتی کی کوشش شروع کر دی مگر وہاں سے گزرنے والے ایک عمر رسیدہ آدمی نے مجھے بچا لیا۔ میرے بچپن اور لڑکپن کے دن انتہائی پرتشدد ماحول میں گزرے۔ پہلے میرے ماں باپ کی لڑائیاں ہوتی تھیں اور پھر ان کی علیحدگی کے بعد میرے بھائی اور ماں کی لڑائی۔ ایک روز میرے بھائی نے میری ماں کو بری طرح پیٹ ڈالا۔ مجھے اس وقت میرے ایک ہی دوست کا فون نمبر یاد تھا، میں نے اسے کال کی اور اس نے پولیس کو اطلاع دی۔ کچھ عرصہ بعد میری ماں کی اپنے نئے بوائے فرینڈ کے ساتھ لڑائی ہو گئی اور اس آدمی نے میری ماں کے ساتھ مجھے بھی تشدد کا نشانہ بناڈالا اور کہا کہ وہ ہم دونوں کو ٹکڑے ٹکڑے کر دے گا۔ 

مزید :

تفریح -