دہشتگردی کی فنانسنگ کا الزام لگنے کے بعد حبیب بینک کا مؤقف بھی آگیا

دہشتگردی کی فنانسنگ کا الزام لگنے کے بعد حبیب بینک کا مؤقف بھی آگیا
 دہشتگردی کی فنانسنگ کا الزام لگنے کے بعد حبیب بینک کا مؤقف بھی آگیا
سورس: Facebook

  

کراچی (ویب ڈیسک) حبیب بینک لمیٹڈ نے دہشتگردی کی فنانسنگ سے متعلق امریکی جج کے بیان اور بلوم برگ پر نشرکی گئی خبر میں مدعی کے الزامات کو یکسر مسترد کرتے ہوئے اُنہیں بے بنیاد قرار دیا ہے۔

"جیو نیوز" کے مطابق اپنے اعلامیے میں حبیب بینک نے کہا کہ وہ ان الزامات پر اپنا دفاع کر رہا ہے، دہشتگرد فنانسنگ کے سدباب کے لیے بینک کا عزم اٹل ہے، انسدادِ دہشتگردی سے متعلق حبیب بینک کے قواعد و ضوابط کا اعتراف خود عالمی ضابطہ کار کرتے ہیں۔

اعلامیے کے مطابق حبیب بینک کی اس کوشش کا اعتراف 2طریقوں سے ہوتا ہے، ایک تو امریکی عدالت نے بینک پر بنیادی ذمہ داری عائد کرنے کی درخواست خارج کی ہے اور دوسرا یہ کہ بینک پر ضمنی ذمہ داری کا تعین بھی قانونی چارہ جوئی کے بغیر ممکن نہیں، امریکی عدالت نے ابھی تک مقدمے کا کوئی فیصلہ نہیں سنایا۔

حبیب بینک لمیٹڈ کے مطابق وہ 2018 سے بزنس ٹرانسفارمیشن پروگرام پر عمل پیرا ہے، منی لانڈرنگ اور دہشتگرد فنانسنگ کے خلاف پروٹوکولز کو عالمی ماہرین کی مدد سے مضبوط کیا گیا ہے۔ یاد رہے کہ گزشتہ روز ایک امریکی جج نے کہا تھا کہ حبیب بینک کو دہشتگردی کی فنانسنگ کے ایک مقدمے میں ضمنی ذمہ داری کے الزامات کا سامنا ہوسکتا ہے۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -