ایران میں ہونیوالے احتجاج کا سلسلہ افغانستان پہنچ گیا، مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے طالبان کی فائرنگ

ایران میں ہونیوالے احتجاج کا سلسلہ افغانستان پہنچ گیا، مظاہرین کو منتشر ...
ایران میں ہونیوالے احتجاج کا سلسلہ افغانستان پہنچ گیا، مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے طالبان کی فائرنگ

  

کابل(مانیٹرنگ ڈیسک) ایران میں جاری احتجاج کی حمایت میں گزشتہ روز افغانستان کے دارالحکومت کابل میں بھی خواتین نے احتجاجی ریلی نکالی۔ نجی ٹی وی چینل 24نیوز کے مطابق کابل میں نکالی گئی اور ریلی میں بھی خواتین وہی نعرے لگا رہی تھیں جو ایران میں مظاہروں کے دوران خواتین لگا رہی ہیں۔ طالبان فورسز نے اس ریلی کو ختم کرنے کے لیے ہوائی فائرنگ کی جس سے تمام خواتین منتشر ہو گئیں۔

رپورٹ کے مطابق کابل میں یہ خواتین ایرانی سفارتخانے کے باہر جمع ہوئیں، جن کی تعداد 25سے زیادہ بتائی گئی ہے۔ واضح رہے کہ ایران میں تین ہفتے قبل 22سالہ مھسا امینی نامی ایک لڑکی کی پولیس کی زیرحراست موت واقع ہونے کے بعد سے ایران میں پرتشدد احتجاجی مظاہرے جاری ہیں جن میں اب تک 60سے زیادہ لوگ موت کے گھاٹ اتر چکے ہیں۔ 

مھسا امینی نامی کرد لڑکی کو عوامی جگہ پر حجاب اتارنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔مظاہرین کی طرف سے الزام عائد کیا جاتا ہے کہ مھسا امینی کی موت پولیس تشدد سے ہوئی تاہم پولیس کا کہنا ہے کہ مھسا امینی پر کوئی تشدد نہیں کیا گیا، انہیں ہارٹ اٹیک آیا تھا جس سے ان کی موت ہوئی۔

مزید :

بین الاقوامی -