انڈین پریمئر لیگ ¾ میچ فکسنگ الزامات کی رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع

انڈین پریمئر لیگ ¾ میچ فکسنگ الزامات کی رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع

  

نئی دہلی (این این آئی)انڈین پریمیر لیگ میں میچ فکسنگ اور سٹے بازی کے الزامات سے متعلق سپریم کورٹ کی طرف سے نامزد تفتیشی پینل نے اپنی رپورٹ ججوں کے پاس جمع کرا دی ہے۔سابق جج مکل مدگل کی سربراہی میں پینل نے اپنی سر بمہر رپورٹ نئی دہلی کورٹ میں بنچ کے سربراہ جسٹس ٹی ایس ٹھاکر کے حوالے کی۔عدالتی تحقیقاتی کمیشن نے بھارتی کرکٹ بورڈ کی تجویز مسترد کرنے کے بعد گزشتہ سال کے ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ کے میچوں سے متعلق سلسلہ وار الزامات کی از سر نو تحقیقات کیں۔

فروری میں مدگل پینل نے ابتدائی رپورٹ میں کہا تھا کہ بی سی سی آئی صدر این سری نواسن سمیت تیرہ افراد تحقیقات چاہتے ہیں۔ابتدائی رپورٹ میں یہ نتیجہ اخذ کیا گیا کہ سرینواسن کے داماد چنئی سپر کنگز کے آفیشل گروناتھ میاپن آئی پی ایل میں سٹے بازی کے مجرم ہو سکتے ہیں۔مارچ میں عدالت نے سرینواسن کو بی سی سی آئی کے سربراہ کے عہدے سے ہٹا دیا تھا ۔اور اب وہ بین الاقوامی کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کے سربراہ ہیں۔ایجنسی فرانس پریس (اے ایف پی) سمیت بین الاقوامی نیوز ایجنسیوں نے بی سی سی آئی کی طرف سے تصاویر پر پابندی عائد کرنے کے بعد 2012 کے بعد سے بی سی سی آئی کی میزبانی میں میچوں کی کوریج معطل کر دی۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -