دھرنوں نے پاکستانی کرنسی کو زبردست نقصان پہنچایا

دھرنوں نے پاکستانی کرنسی کو زبردست نقصان پہنچایا

  

کراچی(آن لائن)اسلام آباد میں جاری دھرنوں نے پاکستانی کرنسی کو زبردست نقصان پہنچایا ہے اور ڈالر کے مقابلے روپے کی قدر میںگراوٹ کی بڑی وجہ بھی اسلام آباد کے ریڈ زون میںجار ی دھرنے ہیں ،اس صورتحال کے سبب ر زرمبادلہ کے ذخائر کم ہوگئے جبکہ غیرملکی سرمایہ کار اور سرمایہ کاری کی پاکستان آمد میںتعطل پیدا ہو گیاہے ۔ فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کے چیئرمین ملک محمدبوستان کے مطابق پاکستانی روپے کا مستقبل اچھا تھا اور حکومت نے انرجی سیکٹر میں کئی منصوبے شروع کئے جبکہ چائنا کے ساتھ23ہار میگا واٹ بجلی کی تیاری کے منصوبے پر دستخط کرنے کے ساتھ ساتھ موٹر وے اورریلوے کے میگا پروجیکٹس بھی شروع کئے گئے اور پاکستان کو سینٹر ایشیا میں اہمیت حاصل ہورہی تھی،کیونکہ پاکستان سینٹر ل ایشیا کا گیٹ وے ہے اور وسطی ایشائی ریاستوں کیلئے ہماری بندرگاہیں اور ایئرپورٹس فائدہ مند ثابت ہونگی،اس روٹس کے ذریعہ پاکستان کو 10ارب ڈالر کا ٹول ٹیکس ملے گا اور یہی سب کچھ پاکستان مخالف قوتیں نہیں چاہتیں کہ پاکستان ترقی کرے۔ملک محمدبوستان نے کہا کہ افگانستان اورسینٹرایشیا کے پاس سمندر نہیں ہے،چائنا اور افغانستان کو ہمارے سمندر کی ضرورت ہے،عالمی مفادات کا مرکز پاکستان ہے لیکن دشمن طاقتوں نے عالمی سازش تیار کرکے اپنے مہرے پاکستان میں بیٹھا دیئے ہیں اور یہ پلاننگ کی گئی کہ سول وار ہو،کیونکہ ہماری فوج آپریشن ضرب عضب میں دہشت گردوں کی سرکوبی میں مصروف ہے اور اسے دہشت گردوں کے خلاف اس آپریشن میں کامیابی ملی ہے ۔

جس سے پاکستان مخالف قوتوں کے عزائم ناکام ہوئے جس کے بعداب پاکستان مخالف عناصر امن وامان کے حالات خراب کرکے معاشی پہیہ جام کرنے کی سازش کررہے ہیں تاکہ جو عالمی معاہدے کئے گئے وہ کھٹائی میں پڑسکیں۔انہوں نے کہا کہ ملک میں ڈالر5روپے تک بڑھنے سے انفلیشن بھی بڑھا ہے،مہنگائی میں اضافہ ہوا ہے اور غریب مشکل میں آجائے گا اور اگر ڈالر کی قدر مزید بڑھی اورڈالر112روپے پر دوبارہ آیا ، روپیہ مزید کمزور ہوا تونہ صرف غریب کی ایک وقت کی روٹی چھن جائے گی بلکہ ملک کو بھی مشکلات کا سامنا رہے گا۔انکا کہنا تھا کہ بعض عناصر کی وجہ سے سری لنکا کے صدر نے دورہ پاکستان منسوخ کیا اور چائنا کے وزیراعظم کو دورہ پاکستان بھی مخدوش ہے اور اگر چین کے وزیراعظم پاکستان نہ آئے تو کئی اہم منصوبے منسوخ ہوسکتے ہیں۔ ملک بوستان نے کہا کہ پاکستان مخالفین ایسے جال بچھا رہے ہیں کہ سول نافرمانی ہو،یہ راستہ گمراہی اور ملکی معیشت کو تباہ کرنے کا راستہ ہے اور ہمارے سیاستدانوں کو حکومت کے ساتھ ملکر ان سازشوں کو ناکام بناناہے،کیونکہ دشمن چاہتا ہے کہ فوج کی توجہ ضرب عضب آپریشن سے ہٹ جائے،ایک طویل عرصہ سے بھارت بدستور دراندازی کررہا ہے اور سرحدی علاقوں میں خلاف ورزی کا مرتکب ہورہا ہے،ہماری بہادر فوج کو ملک میں امن وامان کے حالات خراب کرکے الجھانے کے بجائے فوج کا ساتھ دینے کی ضرورت ہے۔

مزید :

کامرس -