طب یونانی کے بغیر بنیادی مراکز صحت سے مطلوبہ نتائج حاصل نہیں ہو سکتے ،پاکستان طبی کانفرنس

طب یونانی کے بغیر بنیادی مراکز صحت سے مطلوبہ نتائج حاصل نہیں ہو سکتے ...

  

لاہور (پ ر) وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے پنجاب ہیلتھ ریفارمزکی رپورٹ پردیہی و بنیادی مراکز صحت کے نتائج پر عدم اعتماد کا اظہار کیا - انہوں نے پنجاب ہیلتھ ریفارمزکو ہدایت کی کہ 15 دن کے اندراندر دیہی اور بنیادی صحت کے مراکز کو فعال بنانے کے لیے فی الفور منصوبہ بندی کی جائے- پاکستان طبی کانفرنس لاہور ڈویژن کا ایک اہم اجلاس حکیم محمد جاوید رسول کی زیر صدارت منعقد ہوا جس میں وزیر اعلی ٰپنجاب کے بیان پر غور و خوض کیا گیا - اس موقع پر جنرل سیکرٹری پاکستان طبی کانفرنس لاہور ڈویژن حکیم محمداحمد سلیمی نے کہا کہ اگر حکومت پنجاب واقع سنجیدہ ہے تو یہ یاد رکھے کہ طب یونانی اس خطے کا مقبول ترین طریقہ علاج ہے دیہی اور بنیادی مراکز صحت کو فعال بنانے کے لیے طب یونانی کو شامل کرنا ازحد ضروری ہے - اس موقع پر حکیم احمد حسن نوری ، حکیم سید عمران فیاض ،، حکیم عطاءالرحمان صدیقی ، حکیم غلام مرتضی مجاہد ، حکیم محمد شفیق، حکیم حافظ محمد رمضان اور دیگر اطباءکرام نے بھی اظہار خیال کیا - حکیم احمدسلیمی نے کہا کہ حکومت پنجاب طب یونانی کے معالجین کو دیہی و بنیادی مراکز صحت میں تعینات کرکے ایسے مراکز صحت کو فعال کیا جاسکتا ہے -

انہوں نے مزید کہا کہ حکیم ملک کے دور دراز علاقوں میں خدمت کے لیے تیار ہیں - اس کے ساتھ ساتھ ڈاکٹرز کی نسبت کم مراعات پر بھی حکیم خدمت کے لیے ہمہ وقت تیار ہیں - پاکستان طبی کانفرنس نے حکومت پنجاب کو آفر کی کہ ملکی و صوبائی مسئلہ صحت کے حل کے لیے حکیموں کی خدمات حاصل کرنے میں ہر ممکن کردار ادا کرسکتے ہیں-

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -