مٹھی بھر عناصر نے اسلام آباد کو یرغمال بنا رکھا ہے،عدنان ہنجراء

مٹھی بھر عناصر نے اسلام آباد کو یرغمال بنا رکھا ہے،عدنان ہنجراء

  

لاہور (پ ر) پیپلز پارٹی لاہور کے ڈپٹی سیکرٹری ریکارڈ اینڈ ایونٹ چوہدری عدنان اصغر ہنجرا ،مسلم لیگ (ن) لاہور کے رہنما میاں مجاہد حسین کاپی والے نے مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ چند مٹھی بھر شرپسند عناصر نے اسلام آباد کو یرغمال بنا رکھا ہے عمران خان اور طاہر القادری نے حکومت کے خلاف لشکر کشی کرکے ثابت کیا ہے کہ وہ جمہوریت پسند نہیں طاہر القادری پاکستان کی 20کروڑ عوام پر غیر ملکی ایجنڈا مسلط نہیں کرسکتے۔۔

میاں نواز شریف سے استعفٰے کا مطالبہ غیر آئینی اقدام ہے ہم اس کی بھرپور مخالفت کرتے ہیں میاں نواز شریف ڈٹ جائیں اور ان غیر جمہوری قوتوں کا مل کر مقابلہ کریں پیپلز پارٹی جمہوریت کے استحکام کے لیے کسی قربانی سے دریغ نہیں کرے گی طاہر القادری اور عمران خان 3-4یونین کونسلز جتنے لوگ جمع کرکے غیر آئینی طریقے سے وزیر اعظم پاکستان سے استعفٰی نہیں لے سکتے تحریک انصاف اسلام آباد کو آزاد کرے اور پارلیمنٹ کے ذریعے اپنے مفادات حکومت کے سامنے رکھے ۔

اگر آئین کے مطابق مطالبات ہوئے تو تسلیم کرلیے جائیں گے۔ عمران خان سول نافرمانی کا درس دے کر کون سا نیا پاکستان تعمیر کرنا چاہتے ہیں۔ اگر اُن کے ساتھ دھاندلی ہوئی ہے تو وہ سپریم کورٹ اور الیکشن کمیشن کا راستہ اختیار کریں۔ سٹرکوں پر آنے سے کوئی مشکل حل نہیں ہوتی اور نہ ہی یہ کسی مسائل کا حل ہے۔ پیپلز پارٹی جمہوریت کی بالا دستی اورا ستحکام کے لیے وزیرا عظم پاکستان میاں محمد نواز شریف کا بھرپور ساتھ دے گی۔ کیونکہ پیپلز پارٹی نے ہر جماعت کے مینڈیڈیٹ کو تسلیم کیا ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ میاں محمد نواز شریف اپنی آئینی مدت پوری کریں اور الیکشن کے ذریعے انتقالہ اقتدار دوسری جماعت کو منتقل ہو۔ پاکستان کی فوج وطن کی جغرافیائی سرحدوں کی امین ہے۔ ہم افواج پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ جمہوریت کے استحکام کے لیے حکومت پاکستان کا بھرپور ساتھ دیں۔ پیپلز پارٹی کسی ایسی تحریک کا حصہ نہ پہلے بنی ہے اور نہ اب بنے گی۔ اس طرح کے جلوس ،ریلیاں غیر آئینی ہیں۔ پیپلز پارٹی 1973کے آئین پر مکمل یقین رکھتی ہے اور اس کی حفاظت کے لیے جدوجہد کرے گی۔ پارلیمنٹ میں اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ کا بیان قابل تعریف ہے۔ جنہوں نے جمہوریت کی سہی عکاسی کی ہے۔ بلاول بھٹو آئندہ ماہ پنجاب کا دورہ کریں گے اور تنظیم سازی کرکے پارٹی کو گراس رو ٹ لیول سے متحرک کریں گے ۔ تحریک انصاف اور عوامی تحریک مل کر حکومت سے مذاکرات کریں۔ تاکہ پاکستان میں جمہوریت قائم رہے اور کوئی چور درواز ے سے جمہوریت پر شب خون نہ مار سکے۔ اگر مذاکرات کی ناکامی پر جمہوریت ڈی ریل ہوئی تو اُس کے ذمہ دار طاہر القادری اور عمران خان ہوگئے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -