پارلیمنٹ اور آئین کی بالادستی کیلئے آخری دم تک لڑیں گے،خورشید شاہ

پارلیمنٹ اور آئین کی بالادستی کیلئے آخری دم تک لڑیں گے،خورشید شاہ

  

کراچی(اے این این) قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہا ہے کہ دھرنے والوں کو جمہوریت اور پارلیمنٹ سے پیار نہیں،فوج جمہوریت کی محافظ ہے،پارلیمنٹ اور آئین کی بالادستی کے لئے آخری دم تک لڑیں گے،آج کوئی کہتا ہے جمہوریت نہیں چاہیے،کوئی کہتا ہے پارلیمنٹ کی ضرورت نہیں،قوم آنکھیں کھول کر دیکھے کس کا کیا کردار ہے۔کراچی میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ خورشید شاہ نے کہا کہ پیپلزپارٹی نے واضح کردیا ہےکہ پارلیمنٹ بالادست ہے اور عوام کی امیدیں بھی پارلیمنٹ سے بندھی ہیں، دھرنے والوں کو جمہوریت اور پارلیمنٹ سے پیار نہیں جبکہ جمہوریت پسند لوگ ہمارے ساتھ کھڑے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جمہوریت آئین اور قانون کی بالادستی پر کوئی آنچ نہیں آنے دیں گے اور اسے بچانے کے لیے آخری دم تک لڑیں گے، آج کوئی کہتا ہے اسے جمہوریت نہیں چاہئے جبکہ کوئی کہتا ہے کہ پارلیمنٹ نہیں چاہئے، عوام آنکھیں کھول کر دیکھیں کہ کون کیا کررہا ہے اور کس کا کیا کردار ہے۔خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ فوج کو ہم سے زیادہ عوام کے جذبات، احساسات اور صورتحال کا اندازہ ہے، ہم فوج کو خود سے زیادہ جمہوریت کا حامی سمجھتے ہیں اور امید ہے کہ فوج اس دائرے میں کبھی نہیں جائے گی جو کچھ ماضی میں ہوا۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ صورتحال میں جو بھی بات کی جائے طریقے سے کی جائے کیونکہ اس وقت ایک ایک لفظ کی اہمیت ہے تاکہ اس کے کوئی اور معنی نہ نکلیں، الطاف حسین کے بیان سے متعلق خورشید شاہ نے کہا کہ الطاف حسین بادشاہ آدمی ہیں وہ جو چاہیں کہہ سکتے ہیں۔خورشید شاہ نے کہا کہ چوہدری نثارکا بیان سنا نہیں ہے اس لئے اس پر تبصرہ نہیں کر سکتا۔

مزید :

صفحہ اول -