ضد ، انا اور ناک کی وجہ سے حالات پھر بند گلی کی طرف چلے گئے،لیاقت بلوچ

ضد ، انا اور ناک کی وجہ سے حالات پھر بند گلی کی طرف چلے گئے،لیاقت بلوچ

  

لاہور (سٹاف رپورٹر)سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ اسلام آباد سیاسی بحران شدید اور تہہ در تہہ پیچیدہ بنادیا گیاہے ،مذاکرات کے ذریعے مسائل کا حل تلاش کرلیا گیالیکن ضد ، انا اور ناک کی وجہ سے حالات ایک دفعہ پھر بند گلی کی طرف چلے گئے ہیں ۔ حکومت اور دھرنوں والے ہوش کے ناخن لیں ان کی ناک اور ضد کی وجہ سے آئین اور جمہوریت کی گردن قلم نہ ہو جائے ۔ حکومت ، عمران خان اور ڈاکٹر طاہر القادری ہی اس صورتحال کے ذمہ دار ہیں وہی بحران کا خاتمہ کر سکتے ہیں ۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ ملک کی تمام جمہوری قوتیں آئین ، سیاسی و جمہوری عمل ، قومی سلامتی ، دہشتگردی کے خاتمہ ، عوامی مسائل کے حل پر یک آواز ہیں اس کے باوجود آئین سے ماورا کوئی اقدام ہوا تو یہ بدقسمتی اور بڑا المیہ ہو گا۔تمام سیاسی اور جمہوری قوتوں کو باخبر رہناچاہیے کہ حالات 1973 ئ،1988 ء، 1993 ءاور 1999 ءکی طرح روز انہ کی بنیاد پر خراب سے خراب تر ہوتے جارہے ہیںاور فریقین کے درمیان نئی سے نئی غلط فہمیاں پیدا کرنے کا ماحول بنا دیا گیاہے ۔ ماضی سے عبرت حاصل کریں ، سیاسی قوتیں سیاسی بحران خود حل کرنے کی بجائے فوج کو ملوث کریں گے تو یہ جمہوری قوتوں کی ناکامی اور سیاسی بانجھ پن ہے یہ نقصان سب کا نقصان ہوگا۔

لیاقت بلوچ

مزید :

صفحہ آخر -