منجھے ہوئے سیاستدانوں بھی دھرنوں کے خاتمے کا پر امن حل نہ نکال پائے

منجھے ہوئے سیاستدانوں بھی دھرنوں کے خاتمے کا پر امن حل نہ نکال پائے

  

لاہور(انوسٹی گیشن سیل) ملک کا موجودہ سیاسی بحران منجھے ہوئے سیاستدانوں اور خود کو عقل کل سمجھنے والے حکو مت کے مشیر وں کی نااہلی کے باعث بات چیت کے ذریعے حل نہ ہوسکا۔یہ مشیر اور سیاستدان نہ تو عمران خان اور طاہر القادری کو منانے میں کامیاب ہوسکے اور نہ ہی دھرنوںکے خاتمے کا پرامن لائحہ عمل دے سکے ہیں۔تفصیلات کے مطابق ملک میں گزشتہ دوہفتوں سے جاری سیاسی بحران کا حل نہیں نکل سکا۔حکومت کی ٹیمیں ہر روز تحریک انصاف اور پاکستان عوامی تحریک سے مذاکرات کرتی ہیں۔اور ہرروز یہ مذاکرات ناکام رہتے ہیں۔ ملک کے اس سیاسی بحران کے خاتمے کے لیے مختلف سیاسی جماعتوں کے قد آور اور منجھے ہوئے سیاستدانوں کے ساتھ ساتھ حکومتی کابینہ میںشامل اور بعض دیگر مشیروں نے بھر پور کوششیں کی ہیں لیکن متعدد کوششوں کے باوجود یہ ٹیمیں ڈیڈلاک اور بحران ختم نہیں کرسکیں۔عوامی طبقے کی رائے بھی یہی ہے کہ حکومت کے مشیروں اور مذاکراتی ٹیمیں معاملے کو سلجھا نہیں پائیں۔اور صورتحال روز بروز بگڑتی گئی۔ یہ مشیر اور سیاستدان نہ تو عمران خان اور طاہر القادری کو منانے میں کامیاب ہوسکے اور نہ ہی دھرنوں کے خاتمے کا پرامن لائحہ عمل دے سکے ہیں۔

مزید :

صفحہ اول -