پاکستانیوں کی کتنی رقم بیرون ملک ہے، اس کا علم نہیں، گورنراسٹیٹ بینک

پاکستانیوں کی کتنی رقم بیرون ملک ہے، اس کا علم نہیں، گورنراسٹیٹ بینک

کراچی(این این آئی) اسٹیٹ بینک کے گورنر طارق باجوہ نے کہا ہے کہ پاکستانیوں کی کتنی رقم بیرون ملک میں ہے اس کا علم نہیں بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے ڈیٹا کا جائزہ لیا جا رہا ہے، انہوں نے مزید کہا کہ پاکستانیوں کو آف شور ٹریڈنگ کی اجازت دینے پر بھی غور کررہے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا،جب گورنر اسٹیٹ بینک سے سوال کیا گیا کہ وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے مطابق پاکستانیوں کے دو سو ارب ڈالر جو سوئٹزر لینڈ کے بنکوں میں موجود ہیں کیا وہ واپس لائی جائے گی؟ یا اس کی واپسی کیلئے کیا اقدامات کیے گئے؟اس کے جواب میں طارق باجوہ نے لاعلمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ رقم کا معلوم نہیں کہ وہ کتنی ہے انہوں نے کہا کہ پاکستانیوں کو آف شور ٹریڈنگ کی اجازت دینے پر بھی غور کررہے ہیں، اس سلسلے میں ان کے ڈیٹا کا جائزہ لیا جا رہا ہے۔آف شور ٹریڈنگ کو قانونی شکل دینے کیلئے ان کو باقاعدہ اجازت نامہ دیا جائے گا۔

، ان کی ٹرانزیکشن پر بھی نظر رکھی جائے گی اور ان سے ٹیکس بھی وصول کیا جائے گا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ روپے کی قدر سے متعلق رپورٹ اسٹیٹ بینک نے وزارت خزانہ کو ارسال کردی ہے، اب یہ وزارت خزانہ پر منحصر ہے کہ وہ اس رپورٹ کو منظر عام پر لاتی ہے یا نہیں۔امریکہ میں ایچ بی ایل کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ اس معاملے میں جو جرمانے کی بات سامنے آئی ہے اس کو تیکنیکی غلطی سمجھا جائے۔

مزید : کامرس