ریفرنڈم کا انعقاد غلطیوں کی زنجیر میں ایک اور اضافہ کر دے گا، ترکی

ریفرنڈم کا انعقاد غلطیوں کی زنجیر میں ایک اور اضافہ کر دے گا، ترکی

استنبول (اے پی پی) ترکی کے حکام نے کہا ہے کہ عراقی کرد میں ریفرینڈم کا انعقاد ایک بڑی غلطی ہے اور اس میں کرکوک کو شامل کیا جا نا اس سے زیادہ سنگین ہے۔ترک خبررساں ادارے کے مطابق عراقی کرد علاقائی انتظامیہ میں 25 ستمبر کو متوقع ریفرینڈم کے بارے میں ترک محکمہ خارجہ کا ردعمل جاری ہے اور اس دوران علاقائی کشیدگی میں مزید اضافہ کرنے والی ایک اور پیش رفت سامنے آئی ہے۔کرکوک ضلعی اسمبلی نے کرکوک کو بھی ریفرینڈم میں داخل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔اس موضوع پر تنبیہات کرتے ہوئے ترکی نے کہا ہے کہ یہ فیصلہ غلطیوں کی زنجیر میں ایک اور حلقے کا اضافہ کر دے گا۔وزارت خارجہ کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ اس فیصلے نے عراق کے آئین کی ایک دفعہ پھرخلاف ورزی کی ہے۔بیان میں کرکوک کے ترکمان اور عرب گروپوں کی طرف سے مذکورہ فیصلے کا بائیکاٹ کئے جانے کی طرف بھی توجہ مبذول کروائی گئی ہے۔

مزید کہا گیا ہے کہ اس خطرناک طرز عمل کو اصرار کے ساتھ جاری رکھا جانانہ تو عراقی کرد علاقائی انتظامیہ اور عراق کے مفادات کے حق میں ہو گا اور نہ ہی بین الاقوامی برادری اسے قبول کرے گی۔ علاوہ ازیں یہ فیصلہ موجودہ بحرانی دور میں علاقے کے امن و استحکام میں بھی کوئی کردار ادا نہیں کر سکے گا۔

مزید : عالمی منظر