پاک ایران تعلقات دیرینہ اور مضبوط ہیں:ایرانی قونصل جنرل

پاک ایران تعلقات دیرینہ اور مضبوط ہیں:ایرانی قونصل جنرل

پشاور( کرائمز رپورٹر)وفاق ایوان ہائے تجارت و صنعت کے نائب صدررشید احمد پراچہ نے ایرانی قونصل جنرل محمد باقر بی جی پا نچویں پاک ایران بزنس کونسل کے اجلاس کے دوران کہا کہ پاکستان اور ایران کے تعلقات بہت پرانے اور مضبوط ہیں۔جن کو اب تجارتی مضبوطی میں بدلنا ہوگاتاکہ خطے میں ایک مضبوط اکنامک بلاک بن کر ابھر سکے ۔ اس کے ساتھ ساتھ دونوں ممالک پر لازم ہے کہ دستخط شدہ تجارتی معاہدوں پر یقینی عمل پیرا ہوں۔ جس سے دونوں ملک ایک دوسرے کے قریب آسکے ۔مجھے فخر سے کہنا پڑتا ہے کہ ہم ایرا ن سے اپنے روابط بڑھانا چاہتے ہیں، دونوں ممالک کا تعاون اور باہمی تجارت ترقی پزیر ہیں۔ہماری اس ملاقات سے تجارت کے فروغ کے علاوہ تجارتی حجم بڑھانے،تجارتی وفود کے تبادلے اور تجارتی تعلقات بڑھنے کے موقع د ستیاب ہوں گے۔ایرانی تاجروں کیلئے پاکستان بہت بڑی منڈی ہے ۔جس سے دونوں ملکوں کو فائدہ اٹھاناچاہئے۔ایران کے سرمایہ کاروں کو خیبر پختوانخواہ صوبے میں سرمایہ کاری کی دعوت دیتے ہیں۔اس موقع پر سید رضارضاوی ،چےئرمین پاک ایران بزنس کونسل نے ایف پی سی سی ائی کے آنے پر خوشی کا اظہار کیااور کہا کہ پاکستانی تاجر وقت ضائع کر نے کے بغیر ایران میںآپنے مواقع تلاش کریں اور ایف پی سی سی آئی ہمیں وقتاً فوقتاً اس بارے میں اگاہ بھی کرے ۔ انھوں نے اس بات سے آفسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پچھلے تین دھایوں میں پاکستان کے تجارتی روابط ایران سے نہ ہونے کے برابر ہے۔انہوں نے پا کستان اور ایران میں حائل رکاؤٹوں کو دور کرنے پر زور دیا دونوں ممالک کے مابین تجارتی حجم کو پانچ ارب ڈالر تک لے جانے کی گنجائش موجود ہے ۔ قونصل جنرل ایران جناب محمد باقر اور ایف پی سی سی آئی کے نا ئب صدر رشید احمد پراچہ نے پاک ایران دوستی اور کاروبار کے بارے میں تفصیلی گفتگو میں کہا کہ پاکستان ایران کے ساتھ دوطرفہ تعلقات اور تعاون کو مزید بڑھانے کے لئے پُرعزم ہے۔پاکستان اور ایران کے درمیان بینکنگ نظام فعال نہ ہونے کی وجہ سے باہمی تجارت میں مسائل پیدا ہونے کے ساتھ ساتھ نقصان دہ عمل ہے جو ہمارے لئے لمحہ فکریہ ہے وقت ضائع کئے بغیر دونوممالک اس مسئلے کو حل کو یقینی بنا کر بزنس کمیونٹی کو سہولیات دے سکتے ہیں جس سے دونوں ممالک کے مابین تجارت میں مزید وسعت اور بہتری پیدا ہو گی اور روابط بھی مضبوط ہونگے غیر قانی طریقے سے تجارت کی حوصلہ شکنی کرنے کے ساتھ ساتھ بارڈر ٹریڈ کو مضبوط بنا کر وسائل اور سہولیات فراہم کرنا ہو گی تاکہ تمام امور اور مسائل کا مستقل بنیادوں پر حل نکالا جا سکے تاجر برادری روپے اور تمن میں تجارت کو فروغ دے اس حوالے سے پاک ایران مشترکہ ایوان صنعت وتجارت بہتر پلیٹ فارم ہے ۔اس موقع پر چیئرمین فیاض محمد بنگش،MPA ضیاء اللہ بنگش، MPAزرین ضیاء، آغہ زاہد علی صادق، خواجہ شہیب حامد، عر فان شنواری ، ناظر خٹک، چیمبرز کے صدور حاجی فضل الہی،سرتاج خان،فرحان خان،منہاج باچا،محمد اعجاز،حاجی یار افضل، مریم اقبال ، شیراز خان آفریدی ، امداد حسین، خواجہ یاور نصیر، دین محمد، سید جواد قازمی، سید علی ٖفیصل قازمی، خان وزیر، احسن ایاز، مشتاق محمد ودیگر معززین نے شرکت کی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر