شریف برادران سر سے پاﺅں تک کرپشن میں ڈوبے ہیں، پرامید ہوں اعلیٰ عدلیہ جسٹس باقر نجفی کمیشن کی رپورٹ پبلک کرنے میں مدد کرے گی، طاہر القادری

شریف برادران سر سے پاﺅں تک کرپشن میں ڈوبے ہیں، پرامید ہوں اعلیٰ عدلیہ جسٹس ...
شریف برادران سر سے پاﺅں تک کرپشن میں ڈوبے ہیں، پرامید ہوں اعلیٰ عدلیہ جسٹس باقر نجفی کمیشن کی رپورٹ پبلک کرنے میں مدد کرے گی، طاہر القادری

  


لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا ہے کہ شہدا سانحہ ماڈل ٹاﺅن کے لواحقین کی جانب سے جسٹس باقر نجفی کی رپورٹ شائع کرنے کیلئے لاہور ہائیکورٹ میں ایک اور درخواست دائر کر دی ہے اور پرا±میدہوں کہ اعلیٰ عدلیہ باقرنجفی کمیشن رپورٹ پبلک کرنے میں مددکرے گی،عوامی تحریک کے سربراہ لندن سے لاہور پہنچ گئے ، ایئر پورٹ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر طاہر القادری کا کہنا تھا کہ ادارے کمزورکوانصاف فراہم کرنے کی طاقت نہیں رکھتے،اگر کوئی کمزور نیب میں پھنس جائے تو جان چھڑانا مشکل ہو جاتا ہے ، اب نیب کے پاس شاندار موقع ہے کہ وہ اپنی ساکھ کوبحال کرے ،نیب کے جانب سے شریف خاندان کو پیش کرنے کیلئے 3 نوٹس جاری کئے لیکن شریف فیملی کا کوئی شخص پیش نہیں ہوا ،سربراہ عوامی تحریک کا کہنا تھا کہ نیب آرڈیننس 1999 کے سیکشن 16 کے مطابق کے ایک مہینے میں فیصلہ آنا چاہئے سپریم کورٹ نے 6 ماہ کا وقت دے کر شریف خاندان کیساتھ نرمی برتی ہے ،شریف برادران سر سے پاﺅں تک کرپشن میں ڈوبے ہیں اور یہ اپنے اقتدار اور کرپشن کو بچانے کیلئے کوشاں ہیں ، طاہر القادری کا کہنا تھا کہ دنیا کی پانچوں براعظموں پر شریف برادران کے کاروبار پھیلے ہیںاور دالیم 10 میں ان کے ساری دنیا میں کاروبار کی دستاویزات ہیں ، انہوں نے کہا کہ شریف برادران ملکی سالمیت سے کھیلنے والے لوگ ہیں یہ لوگ کے خون سے ہولی کھیلتے ہیں،ان کی نااہلی کے پیچھے صرف اقامہ نہیں بلکہ وہ سب کرپشن کے ثبوت ہیں جو انہوں نے کی ہے ،سپریم کورٹ نے قوانین کے تحت نااہل کیا، سربراہ عوامی تحریک نے کہا کہ یہ لوگ قانون کا سامنا نہیں کر سکتے اس لئے انصاف سے بھاگ رہے ہیں لیکن وہ وقت قریب ہے جب جسٹس باقر نجفی رپورٹ شائع ہو گی اورسارے چہرے نمایاں ہو جائیں گے ، انہوں نے کہا کہ لندن ان کا وطن ہے یہاں تو وہ صرف اقتدار اور لوٹ مار کیلئے آتے ہیں لیکن اب شریف برادران کے اقتدار کے خاتمے کا وقت ہے ۔

مزید : قومی /اہم خبریں