ایل این جی سیکنڈل کرپشن کا سمندر ہے، شاہدخاقان عباسی مرکزی پارٹنر ہیں، نااہل قرار دیا جائے، شیخ رشید، الیکشن کمیشن میں ریفرنس دائر

ایل این جی سیکنڈل کرپشن کا سمندر ہے، شاہدخاقان عباسی مرکزی پارٹنر ہیں، نااہل ...
ایل این جی سیکنڈل کرپشن کا سمندر ہے، شاہدخاقان عباسی مرکزی پارٹنر ہیں، نااہل قرار دیا جائے، شیخ رشید، الیکشن کمیشن میں ریفرنس دائر

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہا ہے کہ ایل این جی سکینڈل کرپشن کا سمندر ہے ،شاہد خاقان عباسی مرکزی پارٹنر ہیں ،سکینڈل میں ملوث ہونے پر وزیراعظم صادق اور امین نہیں رہے ،الیکشن کمیشن سے درخواست ہے کہ شاہد خاقان عباسی کو نااہل قرار اور نام ای سی ایل میں ڈالا جائے ، ایان علی کا نام 5 لاکھ ڈالر پر ای سی ایل میں ڈالا گیا تھا،الیکشن کمیشن میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کیخلاف ریفرنس دائر کرنے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ قطر سے سب سے مہنگی ایل این جی خریدی گئی ہے اورقطر معاہدہ چین، بنگلہ دیش اور بھارت سے بھی مہنگا ہے اور اس معاہدے میں 200 ارب کا گھپلا کیا گیا ہے ،شاہد خاقان عباسی سمیت دیگر لوگ سکینڈل میں ملوث ہیں ، سربراہ عوامی مسلم لیگ نے کہا کہ معاہدے کے دستاویزات نہ ملنے کے باعث ریفرنس دائر کرنے میں تاخیر ہوئی، زندگی میں پہلی بار مجھے کیس سے الگ ہونے کا کہا گیا ، اگرالیکشن کمیشن نے ریفرنس مسترد کیا تو سپریم کورٹ سے رجوع کروں گا، شیخ رشید نے کہا کہ پاکستان میں کیسز کا طوفان آنے والا ہے اوروالیم 10 پر کئی ممالک سے جواب آنا شروع ہو گئے ،نواز شریف کے بیرون ملک جانے سے سب دستاویزات سامنے آنا شروع ہو گئیں ،ایک بینک نیویارک میں نواز شریف کے اکاﺅنٹ کی وجہ سے ڈوب گیا ۔شیخ رشید نے کہا کہ سب کے پنڈورے کھلیں گے،نکلے گا وہی جو صاف اور شفاف ہوگا، ایل این جی کیس میں پارٹنرکے بیٹے کو وزیربنانے سے بھی آپ نہیں بچیں گے،انہوں نے کہا کہ قطر سے معاہدے کاپارلیمنٹ میں کوئی ریکارڈ نہیں ،نیب پر زیادہ بوجھ نہیں ڈالنا چاہتے ،واجد ضیاءنے بیان ریکارڈ کرادیا کہ جو کہا سچ کہا،عوامی مسلم لیگ کے سربراہ نے کہا کہ شاہدخاقان عباسی ہائیکورٹ اورسپریم کورٹ کے ججز کی تعداد میں اضافہ کریں۔

مزید :

اسلام آباد -