بھارت، برقع پوش خاتون نے امام مسجد پر کیمیکل چھڑک کر زندہ نذر آتش کر دیا

بھارت، برقع پوش خاتون نے امام مسجد پر کیمیکل چھڑک کر زندہ نذر آتش کر دیا
بھارت، برقع پوش خاتون نے امام مسجد پر کیمیکل چھڑک کر زندہ نذر آتش کر دیا

  

چنئی(آئی این پی )بھارتی شہر چنئی میں برقع پوش خاتون نے امام مسجد کو آگ لگا کر فرار ہو گئی، امام مسجد زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے اسپتال کے راستے میں ہی دم توڑ گئے۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق بھارتی شہر چنئی کے تریپولین میں بڑی مسجد کے سامنے واقع دفتر میں امام مسجد سید فجرالدین بیٹھے ہوئے تھے جب کچھ برقع پوش خواتین وہاں داخل ہوئیں۔ ان میں سے ایک نے امام پر اچانک کیمیکل پھینک کر آگ لگا دی۔ واقعہ کے فورا بعد فجرالدین کو ہسپتال لے جایا گیا لیکن انھیں بچایا نہ جا سکا۔پولیس کا اس سلسلے میں کہنا ہے کہ 5 خواتین کے ساتھ ملزمہ بھی برقع پہن کر فجرالدین کے دفتر پہنچی۔ جب دیگر خواتین فجرالدین سے بات کر رہی تھیں تبھی ملزم خاتون نے ان کے اوپر ایک کیمیکل پھینک کر اس میں آگ لگا دی۔پویس نے مزید بتایا کہ سید فجرالدین کو آگ لگانے کے بعد خاتون وہاں سے بھاگنے لگی۔ اس دوران امام کے ایک دوست نے ملزمہ کو پکڑنے کی کوشش کی لیکن وہ بچ نکلی۔اس واقعہ میں امامِ مسجد بری طرح جھلس گئے تھے جنھیں فوری طور پر اسپتال پہنچایا گیا لیکن زخموں کی تاب نہ لانے کی وجہ سے ان کا انتقال ہو گیا۔

رپورٹ کے مطابق تریپولن پولیس نے قتل کا معاملہ درج کر کے جانچ شروع کر دی ہے لیکن قصوروار خاتون کی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ہے، پولیس خاتون کی شناخت اور قتل کے پیچھے کی وجہ بھی تلاش کر رہی ہے۔اس واقعہ کی تفتیش کرنے میں مصروف پولیس ٹیم کا کہنا ہے کہ جس طرح سے واقعہ کو انجام دیا گیا اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ قتل منصوبہ بند تھا۔معاملے کی جانچ کر رہے ایک افسر نے بتایا کہ جس طرح خاتون امامِ مسجد کو جلا کر پیدل بھاگی تھی۔

مزید :

بین الاقوامی -