پیمرا کو خود مختار ادارہ بنانے کیلئے آرڈنینس میں ترامیم کی سفارشات منظور

پیمرا کو خود مختار ادارہ بنانے کیلئے آرڈنینس میں ترامیم کی سفارشات منظور

  

اسلام آباد(آن لائن)سینیٹ قائمہ کمیٹی برائے اطلاعات نے پیمرا کو خود مختار ادارہ بنانے کیلئے آرڈیننس میں ترامیم کی سفارشات اتفاق رائے سے منظور کر لی ہیں ،پیمرا اتھارٹی کے 4ممبران صوبوں سے لئے جائیں گے جن میں دو خواتین شامل ہونگی جبکہ چیرمین اور دیگر اراکین وفاقی حکومت اور پاکستان براڈکاسٹنگ ایسوسی ایشن سے منتخب کئے جائیں گے ۔سینیٹ قائمہ کمیٹی برائے اطلاعات و نشریات کے اجلاس میں سیکرٹری اطلاعات نے سپریم کورٹ کے احکامات کے مطابق پیمرا آرڈیننس میں ترامیم سے متعلق سفارشات پیش کیں۔ اس موقع پر سیکرٹری اطلاعات نے کہاکہ ترامیم کا مقصد پیمرا کو خود مختار اور حکومتی تسلط سے آزاد ادارہ بنانا ہے۔ انہوں نے بتایاکہ پیمرا کے چار ممبران کا تعلق چاروں صوبوں سے ہوگا جن میں دو خواتین ممبران ہونگی جبکہ ایک ممبر چیئرمین پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی ،ایک ممبر پاکستان براڈکاسٹنگ کارپوریشن ،ایک ممبر کسی بھی سرکاری ادارے میں تعینات گریڈ 22کا آفیسر جبکہ ایک ممبر وفاقی حکومت کی جانب سے ہوگا۔ قائمہ کمیٹی نے پی ٹی وی کے ریٹائرڈ ملازمین کو پنشن کی عدم فراہمی اور بڑھتے ہوئے خسارے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ادارے کو منافع بخش بنانے کیلئے سفارشات پیش کرنے کی سفارش کی ہے۔ کمیٹی نے ریاستی چینل پر ملک کی تمام سیاسی جماعتوں اور صوبوں کو بھرپور نمائندگی دینے کی بھی ہدایت کی ہے کمیٹی کا اجلاس چیئرمین فیصل جاوید کی سربراہی میں منعقد ہوا۔کمیٹی کو بریفنگ دیتے ہوئے سیکرٹری اطلاعات احمد نواز سکھیرا نے کہاکہ پی ٹی وی کے ریٹائرڈ ملازمین کو 2016سے پنشن سمیت دیگر مراعات ادا نہیں کی گئی ہیں۔ انہوں نے بتایاکہ موجودہ حکومت نے ادارے کو منافع بخش بنانے اور عوام کو معیاری تفریح فراہم کرنے کیلئے سفارشات تیار کرنے کی ہدایت کی ہے جس پر عمل درآمد کیا جارہا ہے۔ ا س موقع پر چیئرمین کمیٹی نے کہاکہ پی ٹی وی نیوز سمیت تمام اداروں پر چاروں صوبوں کو برابر وقت اور تمام سیاسی جماعتوں کو بھی بھرپور نمائندگی دی جائے۔ کمیٹی نے اگلے اجلاس میں پاکستان ٹیلی ویژن کے تمام چینلزسے متعلق تفصیلی بریفنگ پیش کرنے کی ہدایت کی۔

سفارشات منظور

مزید :

علاقائی -