ٹیکس نیٹ وسیع ، 5ہزار کا کرنسی نوٹ ختم کرنے کا فیصلہ

ٹیکس نیٹ وسیع ، 5ہزار کا کرنسی نوٹ ختم کرنے کا فیصلہ

  

اسلام آباد(آئی این پی) وفاقی حکومت نے پانچ ہزار روپے کا کرنسی نوٹ ختم کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے ۔ وزارت خزانہ کی ہدایت پراسٹیٹ بینک نے اس ضمن میں پالیسی بھی بنانا شروع کردی ہے۔ بنکوں میں جو افراد کرنسی نوٹ تبدیل کرانے آئیں گے ان کا ریکارڈ بمعہ شناختی کارڈ نمبر مرتب کیا جائے گا۔تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے پانچ ہزار روپے کا نوٹ ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے لیکن اس کی بندش سے قبل لوگوں کو یہ موقع دیا جائے گا کہ وہ اپنے پاس جمع شدہ نوٹ بنکوں میں دے کر چھوٹی کرنسی والے نوٹ حاصل کرلیں۔ذمہ دار ذرائع کے مطابق بنکوں میں جو افراد کرنسی نوٹ تبدیل کرانے آئیں گے ان کا ریکا رڈ بمعہ شناختی کارڈ نمبر مرتب کیا جائے گا۔نوٹ تبدیل کرانے آنیوالوں سے معلوم کیا جائے گا کیا وہ فائلر ہیں یا نان فائلر؟ اور اگر تبدیل کرانے والی رقم بڑی ہوئی تو استفسارکیا جائے گا کہ اتنی بڑی رقم کہاں سے آئی؟ اور ذرائع آمدن کیا ہیں؟ بڑی رقم تبدیل کرانے والوں سے یہ بھی معلوم کیا جائے گا انہوں نے اپنے گوشواروں میں اسے ظاہر کیا ہے یا نہیں؟ذرائع کے مطابق پانچ ہزار روپے کا نوٹ کم گردش میں ہے اس لیے بہت سے افراد نے اس کی گڈیاں کیش کی صورت میں جمع کررکھی ہیں۔سابقہ دور حکومت میں نیب اور ایف آئی اے نے جب کئی مطلوب افراد کے گھروں پر چھاپے مارکر بھاری رقوم برآمد کیں تو ان میں پانچ ہزارروپے والے نوٹوں کی گڈیاں بہت زیادہ تھیں۔برآمد ہونیوالی رقم کی مالیت اس قدر زیادہ تھی گنتی کیلئے باقاعدہ نوٹ گننے والی مشین بھی منگوانی پڑی جس نے کئی گھنٹوں کی کوششوں کے بعد رقم گنی ۔ پانچ ہزارروپے کے نوٹ کی بندش کے متعلق ذمہ دار ذرائع کا کہنا ہے کہ اس کے ذریعے ٹیکس نیٹ کو وسیع کرنے کی کوشش کی جائے گی۔

مزید :

صفحہ آخر -