ضلع کونسل نو شہرہ کا6ارب50کروڑ روپے سے زائد ٹیکس فری بجٹ منظور

ضلع کونسل نو شہرہ کا6ارب50کروڑ روپے سے زائد ٹیکس فری بجٹ منظور

  

نوشہرہ(بیورورپورٹ)ضلع کونسل نوشہرہ نے 2018-19کا6 ارب50 کروڑ روپے سے زائد ٹیکس فری بجٹ اتفاق رائے سے منظور کردیامحکمہ پبلک ہیلتھ، سی اینڈ ڈبیلو، محکمہ تعلیم اور محکمہ واپڈا کے خلاف بھرپور احتجاج ضلع بھر کے تمام یونین کونسلز میں سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کے شکار، ٹیوب ویل اور پائپ لائنز مکمل طورپر ناکارہ فنڈز کی عدم دستیابی کی وجہ سے ضلعی کونسلروں نے اپنے علاقوں میں کوئی قابل ذکر ترقیاتی کام نہیں کیا اے ڈی او ایجوکیشن کے خلاف بھرپور احتجاج تین سال گزرنے کے باوجود سکالرشپ فنڈز سے ضلعی کونسلران اور طلباء وطالبات محروم ای ڈی او ایجوکیشن کو فوری طورپر ناقص کارکردگی کی وجہ سے معطل کردیاگیا سرکاری افسران ضلع کونسل کے اجلاس میں اپنی شرکت کو یقینی بنائیں چھ ارب روپے کا فنڈ تنخواہوں کی مد میں سرکاری ملازمین وصول کررہے ہیں لیکن ضلعی کونسلروں سے تعاون کی بجائے ان کے خلاف سازشوں میں مصروف ہیں بجٹ میں تنخواہوں کے لئے 6 ارب 45لاکھ روپے غیرترقیاتی اخراجات کے لئے 29 کروڑ 65 لاکھ روپے ترقیاتی اخراجات کی مد میں 30 کروڑ 7 لاکھ روپے ڈسٹرکٹ کونسل گرانٹ 8کروڑ روپے مختص 2017-18 کی نظرثانی شدہ تخمینہ جات کی تفصیل سیلری 5 ارب 71کروڑ روپے نان سیلری 44 کروڑ 28 لاکھ ضلع ٹیکس(سیلری اور آپریشنل اخراجات) 3 کروڑ 56 لاکھ روپے ترقیاتی اخراجات کی مد میں 23 کروڑ 82 لاکھ روپے مختص کئے گئے ہیں تعلیم صحت ابنوشی، نکاس آب، سڑکوں کی تعمیر، زراعت، خواتین کی ترقی، کھیلوں کے فروغ، عوامی فلاح وبہبود، روزگار کی فراہمی، توانائی کے منصوبوں اور بیشتر عوامی سہولیات کی فراہمی اور معاشرے میں مثبت رجحانات کے فروغ ترجیحات میں شامل ہیں تفصیلات کے مطابق ضلع کونسل کا اجلاس زیرصدارت کنوینئر منعقد ہوا اے ڈی شرافت گل، حاجی رحیم شاہ، رضا علی اور تجمل خان ضلع کونسل کے معاونین کی حیثیت سے فرائض انجام دئیے بجٹ پر بحث کرتے ہوئے زرتاج خان آفریدی، قیصر خان، قاضی واجد، حاجی نوشیرخان، ذوالفقار خٹک، ماسٹر عبدالرحمن، حاجی خان بشر، زاہد حیات، حاجی حسین خٹک، ہارون خان، شوکت علی، فلک نیاز خان، اسرار نبی، اسرار خان، عدالت خان، شوکت نظیر، قاری ظہور اللہ، کاشف ترک، سیدعمل شاہ، عدالت خان، آیاز امیر، ملک جلال، ملک زاہد، خوشحال خان، اقلیتی ممبر ڈاکٹر شوکت نے خطاب کیا مقررین نے کہا کہ موجودہ بجٹ بہترین بجٹ ہے لیکن بجٹ کی تقسیم پر عمل درآمد کو یقینی بنایا جائے 2017-18 کے بجٹ میں ابھی تک ہمارے لاکھوں روپے کا فنڈز پڑا ہوا ہے جو تقسیم نہیں کیاگیا 2017-18 اور 2018-19 کے بجٹ میں مختص کروڑوں روپے کا فنڈز فوری طورپر ضلعی کونسلروں میں تقسیم کیاجائے تاکہ اپنے علاقوں میں ترقیاتی کام کرسکے انہوں نے کہا کہ ضلع نوشہرہ کے تمام یونین کونسلز میں کوئی قابل ذکر ترقیاتی کام ضلع کونسل کے فنڈ سے نہیں کیا جس کی وجہ سے عوام ہم پوچھنے میں حق بجانب ہے انہوں نے کہا کہ گزشتہ تین سالوں میں ہم نے اپنے علاقوں میں کوئی ترقیاتی کام مکمل نہیں کیا اور ابھی تک یونین کونسلز میں ترقیاتی کام ادھورے پڑے ہوئے ہیں اس لئے ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ ترقیاتی فنڈز فوری طورپر جاری کیاجائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -