100فیصد بچوں سکولوں میں داخلہ، امتیازی نظام کا خاتمہ، معیار تعلیم بہتر بنانا ہدف

100فیصد بچوں سکولوں میں داخلہ، امتیازی نظام کا خاتمہ، معیار تعلیم بہتر بنانا ...

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود اوپن یونیورسٹی کی تعلیمی خدمات قابل قدر ہیں، حالیہ برسوں میں ملک گیر سطح پر نیٹ و ر ک کی توسیع، طلبہ کی سہو لتو ں میں اضافہ(بقیہ نمبر15صفحہ12پر )

اور یونیورسٹی کی مجموعی ترقی کیلئے اقدامات کے نتیجے میں طلبہ کی تعداد میں ریکارڈ اضافے کا کریڈ یٹ وائس چانسلر، پروفیسر ڈا کٹر شاہد صدیقی کو جاتا ہے، قیدیوں، معذور افراد اور خواجہ سراؤں کو مفت تعلیم فراہم کرنا اوپن یونیورسٹی کے قابل ستائش اقدامات ہیں، حکو مت اِن اقدامات کیلئے اوپن یونیورسٹی کو ہر ممکن سپورٹ فراہم کریگی،گزشتہ روز علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی میں منعقدہ قومی گریجویٹ کانفرنس کی اختتامی تقریب سے خطاب میں وفاقی وزیر تعلیم کا مزید کہنا تھا موجودہ حکومت کی قومی ترجیحا ت میں تعلیم کو مرکزی اہمیت حاصل رہے گی۔ تعلیم کے شعبے میں تین بڑے چیلنجز کا سامنا ہے جن کے حل کیلئے حکومت مکمل طور پر پرعزم ہے ۔اِن چیلنجز میں 25ملین آؤٹ آف سکول بچوں کو تعلیمی نیٹ میں شامل کرنا، تعلیمی نظام میں امتیا زکا خاتمہ اور معیار تعلیم میں اضافہ شامل ہیں ۔ حکومت نے اِس کام کو قومی مشن کے طور پر لیا ہے، اسلئے اِن چیلنجز سے نمٹنے کیلئے ہم ہنگامی بنیادوں پر کام کریں گے ۔ تقریب سے او پن یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی نے بھی خطاب کیا۔قومی گریجویٹ کانفرنس کا اہتمام آفس آف ریسرچ انوویشن اینڈ کمرشلا ئز یشن نے کیا تھاجس میں میں 27جامعات کے طلبہ و طالبات نے شرکت کی ،دو دنوں میں 350مقالے پیش کئے گئے، پیرلل سیشنز، راؤنڈ ٹیبل بحث مباحثے، پوسٹرز اور پراجیکٹس نمائش بھی کانفرنس کا حصہ تھے۔تقریب کے اختتام پر وزیر تعلیم شفت محمود نے اِن سر گرمیوں میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنیوالے طلبہ و طالبات کو اسنادر اور شیلڈز دئیے۔

شفقت محمود

مزید :

ملتان صفحہ آخر -