ریاستی نظام خوشگوار اعلانات سے نہیں مضبوط اقدامات سے تبدیل ہوگا: لیاقت بلوچ

ریاستی نظام خوشگوار اعلانات سے نہیں مضبوط اقدامات سے تبدیل ہوگا: لیاقت بلوچ

  

ملتان(سٹی رپورٹر)جماعت اسلامی پاکستان اور متحدہ مجلس عمل کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ قومی معیشت بحال کرنے (بقیہ نمبر29صفحہ12پر )

کے لیے قرضوں ، سود ، کرپشن اور اللوں تللوں سے نجات پانا ہو گی ۔ ریاستی نظام خوشگوار اعلانات سے نہیں، مضبوط اقدامات سے تبدیل ہوگا۔ملک بھر کی دینی قوتیں تحفظ ناموس رسالت ، عقیدہ ختم نبوت اور اسلامی قوانین کی حفاظت کے لیے متحد ہو جائیں ۔ ۹ ستمبر کو لاہور اور چودہ ستمبر کو راولپنڈی میں عظیم الشان تحفظ ناموس رسالت مار چ منعقد ہوں گے ۔ اسلامیان پاکستا ن ہالینڈ میں گیرٹ ویلڈرز نامی ملعون کی رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے گستاخانہ خاکوں کے مقابلے اور نمائش کے اعلانات کی مذمت کرتے ہیں ۔ یہ آزادئ اظہار رائے کا غلط استعمال ہے، کسی بھی ملک میں انبیائے کرام ؑ کی توہین کی اجازت نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ اور او آئی سی عمل اقدامات کرے اور دنیا کو مذہبی دہشتگردوں سے بچایا جائے ۔انہوں نے کہاکہ قومی معیشت میں تجارت ، صنعت اور زراعت بنیادی اہمیت رکھتی ہے ۔ عمران خان کی قیادت میں حکومت کے لیے سود کے خاتمہ ، قرضوں سے نجات ، کرپشن کا خاتمہ ، لوٹی دولت واپس لانا اور قومی معیشت کو عالمی مالیاتی اداروں کی غلامی سے نجات دلانا اہم ترین چیلنجز ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ عوام کی ہر حکومت سے ہمیشہ اچھی توقعات ہوتی ہیں اور عوام اپنے مسائل کا حل چاہتے ہیں ۔ جماعت اسلامی پاکستان کو اسلامی ، فلاحی اور کرپشن سے پاک ریاست بنانے کی جدوجہد جار ی رکھے گی۔

لیاقت بلوچ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -