پریس کلب میں کشمیر کی موجودہ صورتحال کے تناظر میں تربیتی سیمینارکا اہتمام

پریس کلب میں کشمیر کی موجودہ صورتحال کے تناظر میں تربیتی سیمینارکا اہتمام

  

لاہور (نمائندہ خصوصی) لاہور پریس کلب نے کشمیر کی موجودہ صورتحال کے تناظر میں ایک تربیتی سیمینارکا اہتمام کیا، جس میں لاہور پریس کلب کے قائم مقام صدر ذوالفقار علی مہتو، ممبرگورننگ باڈی قاسم رضا، سابق وزیر قانون سید افضل حیدر، دفاعی تجزیہ نگار بریگیڈیئر (ر) غضنفر، سیا سی امور کے ماہر پرفیسر سجاد نصیر، سابق پاکستان کمشنر معاہد ہ سندھ طاس جماعت علی شاہ سمیت معززممبران بڑی تعداد میں موجود تھے۔ سید افضل حیدر نے اپنے خطاب میں کشمیر کے تاریخی پہلووں پر روشنی ڈالی۔ انھوں نے کہا کہ تقسیم ہند کے وقت لارڈ ماونٹ بیٹن اور پاک بھارت باونڈری کمیشن کے سربراہ ریڈکلف نے ایک گھناونی سازش کے تحت گورداسپور اور دیگر مسلم اکثریتی علاقے بھارت کے حوالے کئے اور بھارت کیلئے کشمیر پر غاصبانہ قبضے کی راہ ہموار کی۔

یگیڈیئر (ر) غضنفر نے دفاعی حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی فوج بھارت کو منہ توڑ جواب دینے کی بھر پور صلاحیت رکھتی ہے تاہم جنگ کسی مسئلے حل نہیں، نیوکلیئر طاقت کے حامل دو ملکوں کے مابین جنگ مکمل تباہی کا پیغام لائے گی،بھارت کشمیریوں کی نسل کشی میں مصروف ہے۔ ہمیں کشمیریوں کے لیے سیاسی، سماجی، ملکی اور بین الاقوامی محاذ پرمتحد ہو کر جدوجہد کرنا ہو گی۔ انھوں نے مزید کہا کہ کشمیریوں کی جدوجہد آزادی اپنے عروج پر ہے، مسئلہ کشمیر بین الاقوامی اہمیت اختیار کر چکا ہے اور اپنے منطقی حل کے قریب ہے۔ جماعت علی شاہ نے مسئلہ کشمیر اور آبی مسائل کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ معاہد ہ سندھ طاس کرنے کا فیصلہ غلط تھا اور یہ کام نوزائیدہ پاکستان کے حکمرانوں نے مصلحت کے تحت کیا، بھار ت کی نظرپا کستان کے دریاؤں پر ہے۔معاہد ہ سندھ طاس کی وجہ سے پاکستان کے 3دریا بھارت کو دینے سے پنجاب کا 17لاکھ ایکٹر رقبہ بنجر ہو گیا اور ریڈ کلف کمیشن کی نا انصافی کی وجہ سے فیروز پور اور مادھو پور بیراج پا کستان کی حدود سے نکال کر بھارت کودیدئیے گئے انہوں نے کہا کہ کشمیر کی جنگ درحقیقت پاکستان کے بقاء کی جنگ ہے سیاسی امور کے ماہرپرفیسر سجاد نصیراپنی تقریر میں کہاکہ پاکستان اور بھارت کے درمیان جنگ کا امکان بہت کم ہے لیکن کشمیر کا مسئلہ بین الاقوامی تو جہ کا مرکزبن کر حل ہو نے کے قریب لگتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کی آزادی میں فیصلہ کن کردار مقبو ضہ وادی کے عوام کریں گے۔ اس موقع پرقائم مقام صدر ذوالفقارمہتو نے مقررین اور حاضرین کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ صحافی برادری کشمیری بھائیوں کے شانہ بشانہ کھڑی تھی، ہے اور رہے گی۔انہوں نے مزید کہا کہ پریس کلب کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کی کامیابی کے لیے اس قسم کے آگاہی سیمینارز اور دیگر پروگرامز کا انعقاد کرتا رہے گا۔پروگرام کے آخر میں معز مہمانوں کو پریس کلب کی جانب سے گلدستے پیش کئے گئے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -