بھارت کشمیری عوام پر ظلم ڈھارہا ہے، عالمی طاقتیں خاموش ہیں: پی پی سندھ

بھارت کشمیری عوام پر ظلم ڈھارہا ہے، عالمی طاقتیں خاموش ہیں: پی پی سندھ

  

کراچی (این این آئی) وزیراطلاعات و محنت سندھ سعید غنی، وزیر بلدیات سندھ سید ناصر حسین شاہ اور مشیر قانون و ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ اس وقت بھارت کشمیر میں 80 لاکھ کشمیریوں پر ظلم و ستم ڈھا رہا ہے لیکن افسوس کہ عالمی طاقتیں اس پر خاموش ہیں۔ ہمارے وزیر اعظم صرف پاکستان میں بیٹھ کر ٹیلی فون پر دیگر ممالک کے سربراہوں سے رابطوں کی بجائے ملک سے باہر نکلیں اور ان عالمی طاقتوں سے اور ان کے سربراہان سے ملاقاتیں کریں اور کشمیر کے اشیو پر اپنا ٹھوس موقف پیش کریں۔ افسوس ہے کہ پوری پاکستانی قوم کشمیر کے اشیو پر جس طرح کی توقع موجودہ حکومت اور وزیر اعظم سے رکھے ہوئے تھی اس میں انہیں مایوسی ہوئی ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی 6 ستمبر کو ٹاور تا کراچی پریس کلب کشمیر ریلی کا انعقاد کررہی ہے اور اس میں تمام سیاسی جماعتوں کو اس میں شرکت کی دعوت دی جائے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے دفتر میں مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر رکن قومی اسمبلی عبدالقادر پٹیل اور رکن سندھ اسمبلی ذوالفقار علی شاہ بھی ان کے ہمراہ موجود تھے۔ وزیر اطلاعات سعید غنی نے کہا کہ آج پورے ملک میں جس طرح کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کی گئی یہ ایک اچھا پیغام تھا لیکن اب ہمیں اظہار یکجہتی کے ساتھ ساتھ عالمی طاقتوں کو بھی کشمیریوں پر ہونے والے ظلم و ستم اور بھارتی جارحیت پر ان کو آگاہ کریں اور انہیں اس بات پر آمادہ کیا جائے کہ وہ بھارتی جارحیت کے خلاف ایکشن لیں۔ سعید غنی نے کہا کہ افسوس کہ جو صورتحال آج سے 70 سال قبل کشمیریوں کی تھی وہ صورتحال ایک ماہ میں مکمل تبدیل ہوئی ہے اور اس کے باوجود ہمارے حکمران اور بالخصوص وزیر اعظم صرف اظہار یکجہتی میں ہی مصروف دکھائی دیتے ہیں۔ سعید غنی نے کہا کہ ہمیں اس بات کی توقع تھی کہ جب بھارت کی جانب سے آئینی طور پر کشمیر کی خصوصی حیثیت کو ختم کیا گیا تو ہمارے وزیر اعظم دنیا بھر کے سربراہان سے مل کر اس پر اپنا شدید ردعمل پیش کریں گے اور عالمی دنیا کو بھارتی مظالم سے آگاہ کریں گے لیکن افسوس کہ صرف ہمارے وزیر خارجہ نے سوائے چین کے کسی اور ملک کا دورہ کیا اور نہ ہی کشمیر پر اس حوالے سے کوئی خاص آواز بلند کی۔ اس موقع پر سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ وزیر اعظم عمران نیازی اور ان کی سلیکٹیڈ پارلیمنٹ کی جانب سے اب تک کشمیر پر اس طرح کا کوئی موقف سامنے نہیں آیا جس کی امید کی جارہی تھی۔ ایک سوال کے جواب میں سعید غنی نے کہا کہ آج کا کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کا اعلان باقاعدہ طور پر نہیں کیا گیا تھا اور نہ ہی کسی قسم کی کوئی وزراء اعلیٰ کی سطح پر کوئی دن منانے کا اعلان کیا گیا تھا البتہ عوامی اور سرکاری طور پر کراچی سمیت صوبے بھر میں سرکاری ملازمین اور پیپلز پارٹی کے کارکنوں نے بھرپور شرکت کرکے اپنے کشمیری بھائیوں سے اظہار یکجہتی کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے تحت اپنے مظلوم کشمیری بھائیوں سے اظہار یکجہتی کے لئے 6 ستمبر کو ٹاور سے کراچی پریس کلب تک ایک عظیم الشان ریلی کا انعقاد کررہی ہے، جس میں تمام سیاسی جماعتوں کو بھرپور شرکت کی دعوت دی جائے گی۔

پی پی سندھ

مزید :

علاقائی -