مودی سرکار کی مہاجرین کی آڑ میں مسلمانوں کو ملک بدر کرنے کی تیاریاں 

    مودی سرکار کی مہاجرین کی آڑ میں مسلمانوں کو ملک بدر کرنے کی تیاریاں 

  

  آسام  (مانیٹرنگ ڈیسک)بھارتی ریاست آسام کے مسلمانوں کے مستقبل پر تلوار لٹکنے لگی، مودی سرکار نے بنگلادیشی مہاجرین کی آڑ میں مسلمانوں کو ملک بدر کرنے کی تیاریاں شروع کردی ہیں۔ آسام میں بھارتی شہریت سے متعلق دی حتمی نیشنل رجسٹر آف سٹیزن (این آر سی) لسٹ آج   31 اگست کو جاری کی جائے گی جس میں 40 لاکھ افراد کی قسمت کا فیصلہ ہوگا، این آر سی لسٹ میں 20 لاکھ مسلمانوں کا نام شامل ہونے کا خدشہ ہے۔حتمی فہرست میں نام شامل نہ ہونے پر حکومت کے فیصلے کے خلاف 120 دنوں کے اندر اپیل کی جاسکتی ہے تاہم شہریت ثابت نہ کرنے والوں کو حراستی کیمپ یا ملک بدری کا سامنا کرنا پڑے گا۔ ریاستی حکومت نے احتجاج کے پیش نظر ریاست بھر میں سیکیورٹی سخت کرکے دفعہ 144 نافذ کردی ہے جبکہ مرکزی حکومت نے ریاست میں سینٹرل آرمڈ پولیس فورسز کی 51 کمپنیاں روانہ کی ہیں۔

ملک بدر

مزید :

صفحہ آخر -